کورونا وائرس ، پنجاب حکومت کا لاہور کیلئے علیحدہ پالیسی بنانے کا فیصلہ ، وفاق سے رابطہ کرلیا

کورونا وائرس ، پنجاب حکومت کا لاہور کیلئے علیحدہ پالیسی بنانے کا فیصلہ ، ...
کورونا وائرس ، پنجاب حکومت کا لاہور کیلئے علیحدہ پالیسی بنانے کا فیصلہ ، وفاق سے رابطہ کرلیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب حکومت نے کورونا کا پھیلاؤ روکنے کیلئے ایس او پیز کی پابندیاں مزید سخت کرنے کیلئے وفاق کو سفارشات بھیجنے کا فیصلہ کرلیا۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی زیرصدارت وزیراعلیٰ آفس میں خصوصی اجلاس منعقد ہوا جس میں کورونا سے متعلق صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔  لاہور میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز روکنے کیلئے خصوصی اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

 اجلاس میں لاہور میں دو ہفتے کے لئے کورونا ایس او پیز کی پابندیاں مزید سخت کرنے کیلئے وفاق کو سفارشات بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا۔ وفاقی حکومت کی حتمی منظوری کے بعد لاہور کیلئے علیحدہ حکمت عملی پر عملدرآمد ہوگا۔

اجلاس کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ لاہور میں عوام کی طرف سے ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنے کے باعث صورتحال تشویشناک ہے۔ پنجاب کے مجموعی مریضوں میں سے نصف سے زائد لاہور میں ہیں۔بازاروں اور مارکیٹوں میں ایس او پیز کی خلاف ورزیاں دیکھی جا رہی ہیں۔ماسک، سماجی فاصلہ اور دیگر احتیاطی تدابیر اختیار نہ کرنے کی وجہ سے کیسز بڑھ رہے ہیں اور لاہور میں عوام کی طرف سے ایس او پیز پر عملدرآمد کے سلسلے میں مطلوبہ تعاون نہیں فراہم کیا جا رہا، اسی لئے کورونا کے مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد خطرے کی گھنٹی بن چکی ہے۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ این ڈی ایم اے پنجاب میں 300 ایچ ڈی یو بیڈز پر مشتمل ہسپتال قائم کرے گی۔حکومت پنجاب مختلف شہروں کے ہسپتالوں میں 300 ایچ ڈی یو بیڈز فراہم کرے گی۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ہدایت کی کہ پنجاب میں کورونا کے مریضوں کیلئے درکار انجکشن کی کمی نہیں ہونی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ ایک ہفتے میں پنجاب میں تقریباً سات سو انجکشن سرکاری ہسپتالوں کو فراہم کئے جائیں گے۔انجکشن کی تقسیم مریضوں کی تعداد کے تناسب سے کی جائے گی۔

اجلاس میں سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، چیف سیکرٹری،ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، انسپکٹر جنرل پولیس، محکمہ صحت اور دیگر متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز نے شرکت کی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -