بجٹ21.2020,مولانا فضل الرحمان کے صاحبزادے مولانا اسعد محمود نے بھی حکومت کے خلاف اپنے دل کا غبار نکال لیا

بجٹ21.2020,مولانا فضل الرحمان کے صاحبزادے مولانا اسعد محمود نے بھی حکومت کے ...
بجٹ21.2020,مولانا فضل الرحمان کے صاحبزادے مولانا اسعد محمود نے بھی حکومت کے خلاف اپنے دل کا غبار نکال لیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جمعیت علمائے اسلام ف کے رہنما اور مولانا فضل الرحمان کے فرزند مولانا اسعد محمود نے بجٹ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ  حکومت نے اپنا بوجھ گزشتہ حکومتوں پر ڈالنے کی کوشش کی ہے،حکومت نے ایک سال میں تین ،تین بجٹ پیش کئے اور نئے نئے ٹیکسز بھی لگاتی رہی ہے،اس کے سارے دعویٰ کھوکھلے ہیں، نا اہل حکومت کرونا کے پیچھے چھپ رہی ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق جے یو آئی (ف) کے رہنماء مولانا اسعد محمود نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ جی ڈی پی کو منفی اعشاریہ صفر چار پر لے کر آگئے ہیں،جو ٹیکس اکٹھے کیئے جانے تھے اس میں تقریبا 900 ارب کا خسارہ آ رہا ہے،اپوزیشن اراکین کو بجٹ کی کاپیاں تک فراہم نہیں کی گئیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے اپنا بوجھ گزشتہ حکومتوں پر ڈالنے کی کوشش کی، اس حکومت نے ایک سال میں 3،3 بجٹ پیش کیئے اور نئے نئے ٹیکسز بھی لگاتے رہے، اور اپنے ہی ہدف کو پورا نہیں کر سکے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے اعداد و شمار کے مطابق جی ڈی پی 0.4 پر ہے جبکہ ان کو حکومت ملتے وقت 5.8 پر تھی ، کرونا سے قبل بھی 2.3 پر تھی ، نا اہل حکومت کرونا کے پیچھے چھپ رہی ہے ،ہم نے کشمیر ایشو پر انکا ساتھ دیا تو حکومت مسئلے کو حل کرنے کے بجائے ٹماٹر ، آٹا ، چینی ، اور پئٹرول کے بحران میں پھنس گئی ہے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -