روسی خام تیل کا پہلا جہاز کراچی بند ر گاہ پہنچ گیا، پٹرولیم مصنوعات 20فیصد سستی ہونے کا امکان 

روسی خام تیل کا پہلا جہاز کراچی بند ر گاہ پہنچ گیا، پٹرولیم مصنوعات 20فیصد ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


      کراچی(سٹاف رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) روس سے درآمد کیے جانیوالی خام تیل کی پہلی کھیپ کراچی بندرگاہ پہنچ گئی۔ا حکومت اور روس کے درمیان تیل کی خریداری کے معاہدے کے بعد اتوار کو روس سے خام تیل کی پہلی کھیپ کراچی پورٹ پہنچ گئی، ”پیور پوائنٹ“ نامی بحری جہاز کراچی بندرگاہ پہنچ گیا۔کراچی پورٹ ٹرسٹ کے مطابق جہاز پر 45 ہزار ٹن خام تیل لدا ہوا ہے جسے آئل پیئر نمبر دو پر لنگر انداز کیا گیا۔ روس سے درآمد ہونے والا خام تیل پاکستان میں توانائی کی طلب پوری کرنے کے ساتھ خام تیل کی درآمد سے زرمبادلہ پر پڑ نے والے دباؤ کو بھی کم کرنے میں مدد دے گا۔روس سے خام تیل کی 50 ہزار ٹن کی دوسری کھیپ بھی ایک ہفتے میں کراچی پہنچے گی، روسی خام تیل آزمائشی بنیادوں پر پاکستان ریفا ئنری میں ریفائن کیا جائیگا۔وزارت پیٹرولیم کے ذرائع کے مطابق روس سے خام تیل کی موخر ادائیگی کی سہولت کیساتھ پرکشش ڈسکاؤنٹ پر خریدا جارہا ہے جس سے پاکستان کو  توانائی کے بحران سے نکالنے کیساتھ زرمبادلہ کے ذخائر کو مستحکم رکھنے میں بھی مدد ملے گی۔پاکستان کی دو بڑی ریفائنریز پاکستان ریفائنری لمیٹڈ نے اپنی ضرورت کا ایک تہائی سے 50 فیصد گنجائش روسی خام تیل سے پوری کرنے میں دلچسپی ظاہرکی تھی جبکہ پارکو کی جانب سے ایک تہائی یا 33 فیصد روسی لائٹ خام تیل کی دیگر خطوں سے درآمد خام تیل میں بلینڈ کرنے میں دلچسپی ظاہر کی تھی۔پاکستان کے نجی شعبے نے بھی اپنی ضرورت 80 فیصد روسی خام تیل سے پوری کرنے میں دلچسپی ظاہر کی ہے یہ جہاز 11 جون کو دن 2 بجے کراچی پور ٹ پہنچا جسے فوری طور پر آئل پیئر نمبر 2 پر لنگر انداز کرایا گیا۔پورٹ ذرائع کا کہنا ہے جہاز طوفان کی آمد سے عین دو روز قبل کراچی پہنچا جسے پورٹ پر تمام تر ہنگامی اقدامات کے تحت لنگر انداز کرایا گیا اور آئندہ چوبیس گھنٹوں میں ڈسچارجنگ کا عمل مکمل کرلیا جائیگا۔روسی تیل کے پاکستانی آنے سے مستقبل میں پیٹرولیم مصنوعات 20 فیصد تک سستی ہونے کا امکا ن ہے۔
روسی تیل

مزید :

صفحہ اول -