خیبر پختونخوا کے بارش سے متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیاں جاری 

خیبر پختونخوا کے بارش سے متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیاں جاری 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


     لاہور،پشاو (اپنے نمائندے سے،مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) خیبر پختونخوا کے جنوبی اضلاع میں کل آنیوالے شدید طوفان اور بارش کے بعد پاک فوج امدادی کارروائیوں میں مصروف ہے۔خیبرپختونخوا میں کل آنیوالے طو فا ن میں بنوں، لکی مروت اور کرک کے اضلاع سب سے زیادہ متاثر ہوئے، اب تک کی اطلاعات کے مطابق طوفانی بارش کے باعث جاں بحق اور زخمی ہونیوالوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ریکارڈ کیا جا رہا ہے۔پاک فوج کی امدادی ٹیمیں پوری رات امدادی کارروائیوں میں مصروف رہیں، پاک فوج تمام تر وسائل بروئے کار لا کر اس مشکل وقت میں سول انتظامیہ کیساتھ عوام کے شانہ بشانہ کھڑی ہے، عسکری ادارے کے ڈاکٹر بھی زخمیوں کی طبی امداد میں مصروف ہیں۔مسلم لیگ کے رہنماء امیر مقام نے  کہا ہے کہ  طوفان  و بارش میں  جاں بحق افراد کے لواحقین کو 10لاکھ، زخمیوں کو 3لاکھ،معمولی زخمی کو50ہزارامداد دی جائے گی5 سو ملین روپے سے زائد نقصان ہوا ہے۔ ان علاقوں میں نقصانات ہوئے ہیں جہاں سے بجلی بلوں کی ریکوری نہ ہونے کے برابر ہیں وزیراعظم شہباز شریف نے اس کے باوجود بجلی کی فوری بحالی کی ہدایات کی ہیں ٹیسکو کے زیر انتظام دو گرڈ اسٹیشن خراب ہوئے ہیں دلہ زاک گریڈ سٹیشن بھی متاثر ہوا تھا تاہم متبادل شاہی باغ گرڈ اسٹیشن سے بجلی فراہم کرکے گرڈ اسٹیشن سے بجلی بحال کردی ہے  سیکرٹری ریلیف کے مطابق متاثرین کیلئے امدادی سامان کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔صوبائی حکومت متاثرین کی بھرپور امداد کے لیے کوشاں ہے۔ صوبائی حکومت کی ہدایت پر ڈی ایم اے نے ضلع بنوں کے متاثرین کیلیے چار کروڑ روپے جاری کردیے۔ضلعی انتظامیہ نقصانات کا تخمینہ لگانے کی ہدایت جاری کردی گئی ہیپی ڈی ایم اے اضلاع کے ساتھ قریبی رابطے میں ہے۔متاثرین کو حکومتی پالیسی کے مطابق ریلیف مہیا کیا جائیپی ڈی ایم اے نے ہفتہ کی رات آنیوالی آندھی اوربارش سے پنجاب میں ہونیوالے نقصانات کی رپورٹ جاری کر دی۔ رپورٹ کے مطابق پنجاب میں مجمو عی طور پر 10 واقعات رپورٹ ہوئے،مختلف حادثات میں تین بچیوں سمیت 5 افراد جاں بحق جبکہ17 افراد زخمی ہوئے۔رپورٹ کے مطابق بارش کے باعث دیوار گرنے سے 2 جانور بھی ہلاک ہوئے۔ پی ڈی ایم اے کے مطابق صوبہ بھر کی انتظامیہ سے مکمل رابطے میں ہیں۔
امدادی سرگرمیاں 

مزید :

صفحہ اول -