صوبائی نگران حکومت بجٹ میں سرکاری ملازمین پر شب خون مارنے کی کوشش نہ کریں: مریم اورنگزیب

صوبائی نگران حکومت بجٹ میں سرکاری ملازمین پر شب خون مارنے کی کوشش نہ کریں: ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


       پبی (نما ئندہ پاکستان)ایپکا نے صوبائی اسمبلی کے سامنے پڑاو ڈالنے کا اعلان کردیا۔صوبائی حکومت ملازمین کی تنخواہوں میں 15 فیصد اضافہ کی تجویز کو یکسر مسترد کرتے ہیں۔ حکومت وفاقی بجٹ میں تنخواہوں میں 35 فیصد اضافے کے اعلان پر من وعن عملدرآمد کریں صوبائی حکومت بجٹ میں سرکاری ملازمین پر شب خون مارنے کی کوشش نہ کریں۔ورنہ بجٹ کے دن صوبائی اسمبلی کا گھیراو کرینگے۔ان خیالات کا اظہار اورنگزیب کشمیری مرکزی سیکرٹری جنرل ایپکا پاکستان نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ نگراں صوبائی حکومت ملازمین کی تنخواہوں میں 15 فیصد اضافہ کرنے پر غور کر رہے ہیں۔جس کی وجہ سے سرکاری ملازمین میں شدید اشتعال پیدا ہواہے۔کہ ملک میں مہنگائی 200 فیصد سے زیادہ ہے۔اور اشیائے خورد نوش۔ادویات۔یوٹیلیٹی بلز کی قیمتوں میں بیتحاشا اضافہ کیا گیا ہے۔اور ملازمین کی تنخواہوں میں ابھی تک کوئی اضافہ نہیں کیا گیا ہے انہوں نے کہاکہ ھم نے  وفاقی حکومت کو بجٹ میں 35 فیصد  تنخواہوں میں اضافہ کرنے پر مجبور کر دیا۔اور ملک بھر کے سرکاری ملازمین نے پارلیمنٹ ھاوس اسلام آباد کے سامنے 2 دن سے  اس شدید گرمی میں دھرنا دیا۔اور اپنا حق مانگ کر نہیں چھین کر لیا۔انہوں نے مزید کہا۔کہ وفاق کی طرز پر صوبہ سندھ کی حکومت نے بھی اپنے صوبائی بجٹ میں ملازمین کی تنخواہوں میں 35 فیصد اضافہ کا اعلان کر دیا۔اگر خیبرپختونخوا کے نگراں حکومت نے ملازمین کے حق پر ڈاکہ ڈالنے کی کوشش کی۔اور بجٹ میں وفاق کی طرز پر تنخواہوں میں اضافے کا اعلان نہ کیا۔تو پھر بجٹ کے دن صوبہ خیبر پختون خواہ کے سکیل 1 سے لیکر 22 تک ملازمین صوبائی اسمبلی کا گھیراو کرینگے۔اور دھرنا اس وقت تک جاری رہے گا۔جب تک ھمارے جائز مطالبات منظور نہ کئے جائیں