سلمان فاروقی کی کتاب ڈیئر مسٹرجناح کونصاب میں شامل کیا جائے، مقررین 

  سلمان فاروقی کی کتاب ڈیئر مسٹرجناح کونصاب میں شامل کیا جائے، مقررین 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(خبر نگار)سلمان فاروقی کی کتاب”ڈئیر مسٹر جناح“ کوملک کی تمام لائبریریوں کا لازمی حصہ بنایا جائے بلکہ اسے سول سروسز کے نصاب میں بھی شامل کیا جانا چاہیے۔مصنف نے ہمیشہ ایمانداری  کے ساتھ اپنے فرائض انجام دیئے ان خیالات کا اظہارسابق بیوروکریٹ سلمان فاروقی کی یادداشتوں پر مبنی کتاب”ڈئیر مسٹر جناح“ کی الحمراء میں تقریب رونمائی کے موقع پر مقررین نے  کیا۔ تقریب رونمائی کے مہمان خصوصی سید بابر علی تھے۔ مہمان خصوصی سید بابر علی نے کہا کہ کتاب میں سینکڑوں اچھی چیزیں ہیں۔”ڈیئر مسٹر جناح“ یقیناً پڑھنے کے قابل ہے۔ سلمان فاروقی نے کتاب میں لکھا ہے کہ بہت سارے سیاستدانوں نے ملک کیلئے کیسا کام کیا، کتاب کی تقریب رونمائی قابل تعریف ہے۔مجیب الرحمٰن شامی نے ڈئیر مسٹر جناح پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ یادداشتیں پاکستان پر گزرنے والے مصائب کی یاد دلاتی اور ہمارے عزم کو توانا کرتی ہیں۔ کتاب کے ابواب اس بات کا تقاضہ کرتے ہیں کہ پر شخص اپنی ذمہ داری کا احساس کرے اور حدود سے تجاوز نہ کرتے ہوئے آئین کے ساتھ کھڑا ہو۔انہوں نے مزید کہا کہ 1951ء کے بعد جس طرح ملک پر سیاستدانوں کا قبضہ ہوا اس کے نتیجے میں ہم آج جہاں کھڑے ہیں وہاں نہیں پہنچنا چاہئے تھا۔ جو حقائق کتاب میں درج کئے گئے ان سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔کامران لاشاری نے کہا کہ سلمان فاروقی نے ہمیشہ اپنی کارکردگی اور سروس ڈلیوری پر توجہ دی۔ بڑے گریڈز اور عہدوں کیلئے کبھی کوشش نہیں کی۔ امینہ سید نے کہا کہ سلمان فاروقی کی ملک و قوم کیلئے خدمات کئی دہائیوں پر مشتمل ہیں۔ انہوں نے 6 وزرائے اعظم، 3 گورنرز اور 2 صدور کے ساتھ کام کیا اور ایمانداری اور ڈیلیوری کو ملحوظ خاطر رکھا۔چیئرمین لاہور آرٹس کونسل رضی احمدنے کہا کہ  اس کتاب کا اردو اور دیگر زبانوں میں ترجمہ ہونا چاہیے۔شکیل درانی،ڈا کٹر اعجاز نبی نے  بھی خیالات کا اظہار کیا۔