بچوں کی اسمگلنگ کے کیس میں صارم برنی کی ضمانت مسترد

      بچوں کی اسمگلنگ کے کیس میں صارم برنی کی ضمانت مسترد

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی شرقی کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے بچوں کی اسمگلنگ کے کیس میں سماجی کارکن صارم برنی کی درخواست ضمانت پر فیصلہ سناتے ہوئے ان کی ضمانت مسترد کردی ہے۔منگل کوجوڈیشل مجسٹریٹ شرقی کی عدالت میں سماجی کارکن صارم برنی کے خلاف بچوں کوغیر قانونی طور پر بیرون ملک بھیجنے اور جعلی دستاویزات بنانے کے الزام سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ملزم کے وکلا اور وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے)کے دلائل مکمل ہوگئے، صارم برنی کی درخواست ضمانت پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا، جو بعد ازاں سنا دیا گیا۔ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ مزید ثبوت جمع کرنے ہیں، ملزم کو ضمانت دی گئی تو وہ ان کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرے گا، ملزم مسلسل جھوٹ کا سہارا لے رہا ہے۔ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے مزید دلائل دیئے کہ تفتیش کے دوران مزید انکشافات سامنے آئے ہیں۔ ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا تھا کہ بچی حیا کو فیملی کورٹ میں لاوارث قرار دیا گیا ہے، بچی کی والدہ افشین نے مدیحہ نامی خاتون کو فروخت کیا تھا اور مدیحہ نے بچی کو بشری کے پاس فروخت کیا ہے جبکہ فیملی کورٹ میں صارم برنی ٹرسٹ نے بچی کو لاوارث قرار دیا ہے۔انہوں نے کہاکہ ملزم تفتیش میں تعاون نہیں کررہے ہیں ایک بھی سوال کا صحیح جواب نہیں دے رہے ہیں اور بھی متاثرین20 سے زائد ہیں جن کی نشاندہی کرنی ہے۔وکیل ایف آئی اے نے کہا کہ ملزم اس حوالے سے تعاون نہیں کررہے ہیں، ملزم کے ٹرسٹ کے حوالے سے بینکوں سے معلومات کا کہا ہے۔بعد ازاں عدالت نے صارم برنی کی درخواست ضمانت پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا اور کہا کہ درخواست ضمانت پر فیصلہ ایک گھنٹے بعد سنایا جائے گا۔عدالت نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے سماجی کارکن صارم برنی کی درخواست ضمانت مسترد کر دی۔