بجٹ2024-25 ، حکومت نے سولر سے حاصل ہونے والی بجلی سے متعلق اہم فیصلے کر لیے

بجٹ2024-25 ، حکومت نے سولر سے حاصل ہونے والی بجلی سے متعلق اہم فیصلے کر لیے
بجٹ2024-25 ، حکومت نے سولر سے حاصل ہونے والی بجلی سے متعلق اہم فیصلے کر لیے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی حکومت آج شام 18 ہزار ارب سے زائد کابجٹ قومی اسمبلی میں پیش کرنے جارہی ہے جس کی دستاویزات منظر عام پر آ گئی ہیں، جس میں بجلی کی پیداوار میں ایک ہزار 962 میگاواٹ اضافے کا ہدف مقرر کیا گیاہے ۔

بجٹ دستاویزات کے مطابق جون 2025 تک بجلی کی پیداواری صلاحیت 43 ہزار 310 میگا واٹ تک بڑھانے کا منصوبہ  ہے ،جون 2025 تک سولر سے بجلی پیدوار 782 میگاواٹ  ہو جائے گی ، آئندہ سال ہواسے بجلی پیداوار ایک ہزار 845 میگاواٹ ہو جائے گی  جبکہ پانی سے بجلی کی پیداوار 11 ہزار 820 میگا واٹ ہو جائے گی، ہائیڈل بجلی کی پیدوار میں آئندہ سال ایک ہزار ایک سو میگا واٹ کا اضافہ ہو گا۔

 آئندہ سال ایل این جی سے بجلی کی پیداواری صلاحیت 8 ہزار 125 میگاواٹ ، تیل سے بجلی کی پیداواری صلاحیت چار ہزار 906 میگا واٹ  تک ہو جائے گی ۔

مزید :

قومی -