دہشت گردی ضیاءالحق سے ورثے میں ملی ، جدید ہتھیاروں اور سرحدیں سیل کرنے کی ضرورت ہے : آئی جی سندھ

دہشت گردی ضیاءالحق سے ورثے میں ملی ، جدید ہتھیاروں اور سرحدیں سیل کرنے کی ...
دہشت گردی ضیاءالحق سے ورثے میں ملی ، جدید ہتھیاروں اور سرحدیں سیل کرنے کی ضرورت ہے : آئی جی سندھ

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) قائم مقام آئی جی سندھ غلام شبیر شیخ نے اعتراف کیاہے کہ پولیس کو جدید خطوط پر استوار نہیں کیا گیا، دہشت گردی آمر ڈکٹیٹر ضیا الحق کی پیدا وار ہے جس نے افغانستان نے جہاد کے نام پر امپورٹ کی۔پولیس ہیڈ کواٹرز گارڈن میں گزشتہ روز بلدیہ ٹاو¿ن میں جاں بحق ہونیوالے پولیس اہلکار کی نماز جنازہ کے بعد قائم مقام آئی جی سندھ غلام شبیر شیخ نے میڈیا سے بات چیت کرتے کہا کہ ضیاءالحق نے جہاد افغانستان کے نام پر دہشت گردی کو امپورٹ کی اور آمر حکومت کے دور میں ہی راکٹ لانچر اور منشیات ملک میں آئی،ہمیں دہشت گردی ورثے میں ملی ہے۔اُنہوں نے کہاکہ دہشت گردی پر قابوپانے کیلئے جدید ہتھیاروں اورملکی سرحدوں کو سیل کرکے دروازے لگانا ہوں گے۔ انہوں نے بتایاکہ لسانی اور مذہبی تنظیموں کے پاس راکٹ لانچر ہیں،کراچی میں دہشت گردی باہر سے آنے والے کر رہے ہیںکیونکہ کراچی میں ایسی کوئی فیکٹری نہیں ۔

مزید :

کراچی -