سحری کروانے کے بہانے غیر ملکی لڑکی کے ساتھ زیادتی کرنے والے پاکستانی نوجوان کو دبئی میں 5 سال قید کی سزا، سزا میں کمی کے لیے اپیل دائر کی تو جج نے کیا فیصلہ سنا دیا؟ جان کر آئندہ کوئی شخص غلطی سے بھی ایسا کام نہ کرے گا

سحری کروانے کے بہانے غیر ملکی لڑکی کے ساتھ زیادتی کرنے والے پاکستانی نوجوان ...
سحری کروانے کے بہانے غیر ملکی لڑکی کے ساتھ زیادتی کرنے والے پاکستانی نوجوان کو دبئی میں 5 سال قید کی سزا، سزا میں کمی کے لیے اپیل دائر کی تو جج نے کیا فیصلہ سنا دیا؟ جان کر آئندہ کوئی شخص غلطی سے بھی ایسا کام نہ کرے گا

  

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) دبئی میں ایک پاکستانی شخص نے فلپائنی خاتون کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جس پر عدالت نے اسے 5سال قید کی سزا سنا دی۔ مجرم نے اس زیریں عدالت کے فیصلے کو اعلیٰ عدالت میں چیلنج کر دیا جہاں سے ایسا حکم نامہ جاری کر دیا گیا کہ سن کر مجرم کے ہوش اڑ گئے۔گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق اعلیٰ عدالت نے مجرم کا موقف مسترد کر دیا اور اس کی قید کی سزا میں اضافہ کرتے ہوئے 5سال سے بڑھا کر 10سال کر دی۔

رپورٹ کے مطابق 27سالہ مجرم نے فلپائن کی 32سالہ خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا تھا جو دبئی میں سیلز وومن کی ملازمت کرتی تھی۔ بدبخت مجرم نے اسے رمضان مبارک میں سحری پر بلایا اور ہوس کا شکار کر ڈالا۔ تاہم عدالت میں ملزم کا کہنا تھا کہ اس نے ملزمہ سے زیادتی نہیں کی بلکہ یہ عمل دونوں کی رضامندی سے ہوا تھا لیکن دونوں عدالتوں نے اس کا یہ موقف مسترد کر دیا۔ رپورٹ کے مطابق مجرم اس عدالت کے فیصلے کو بھی 25دن کے اندر اس سے بڑی عدالت میں چیلنج کر سکتا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -