سید نور کا پاکستان فلم انڈسٹری اور کلچرل پالیسی کا خیر مقدم

سید نور کا پاکستان فلم انڈسٹری اور کلچرل پالیسی کا خیر مقدم
سید نور کا پاکستان فلم انڈسٹری اور کلچرل پالیسی کا خیر مقدم

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(فلم رپورٹر)معروف ہدایتکار سید نور نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے پاکستان فلم انڈسٹری اور کلچرل پالیسی کا خیر مقدم کرتا ہوں۔ حکومتی سطح پر فلم انڈسٹری کے لئے کچھ ہونے کی امید تو ہوئی ہے اس سے فلم انڈسٹری کو فائدہ ہوگا۔ ان کاکہنا ہے کہ ماضی میں ہماری انڈسٹری میں بہت عمدہ کام ہوا۔ موجودہ دور میں بھی عمدہ کام ہورہاہے ، ہماری انڈسٹری میں رابطوں کا فقدان ہے جس کی وجہ سے ایک پلیٹ فارم پر اکھٹے نہیں ہوپارہے ہیں۔سید نورکہنا ہے کہ فلم کراچی میں بنے یا لاہور پشاور میں لالی ووڈ انڈسٹری کی ہی فلم کہلاتی ہے میری نظر میں اس طرح کی کوئی بات نہیں ہے میں نے لاہور میں بھی فلمیں بنائی ہیں اور کراچی میں بھی فلمیں بنائی ہیں اور بنا رہا ہوں کچھ سازشی عناصر فلم انڈسٹری کوصوبوں کی بنیاد پر تقسیم کرنے کی بات کرتے ہیں جس کی پْر زور مذمت کرتا ہوں۔ انکا کہنا تھا کہ ہمارا ماضی کا کام کسی سے ڈھکا چھپا نہیں ہے اور ہر فلم ہٹ یا سپر ہٹ ہونا بھی ضروری نہیں۔

ان کاکہنا ہے کہ رواں سال ماضی کے مقابلے میں قدرے بہتر رہاہے۔ اچھی فلمیں تخلیق ہوئی ہیں پاکستان سمیت دنیا کے دیگر ممالک میں بھی ریلیز کی گئیں ہیں جو کہ فلم انڈسٹری کی ترقی اور فروغ کا باعث بنا ہے۔ ان کاکہناہے کہ ہمیں اچھی اور معیاری کہانیوں پر مبنی فیچر فلمیں بنانی ہیں۔معیاری فیچر فلموں سے اپنا گراف بلند کرنا ہے۔ پاکستان کی عوام نے ایک بار پھر سینماء گھروں کا رخ کیا ہے۔دنیا کے دیگر ممالک میں بھی فلموں کی ریلیز سے ہم اپنی ثقافت کو بھی پرموٹ کررہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ پاکستان میں کسی بھی شعبے میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے، انڈسٹری میں فنکار برادری بھی اچھا کام کررہی ہے ٹی وی کے فنکار بھی فلم انڈسٹری کے لئے اچھا اضافہ ثابت ہورہے ہیں۔

مزید : کلچر