مصری شاہ ، پولیس اسٹیشن سٹی ڈویژن کے تھانوں میں سرفہرست آگیا

مصری شاہ ، پولیس اسٹیشن سٹی ڈویژن کے تھانوں میں سرفہرست آگیا

لاہور(لیاقت کھرل) سٹی ڈویژن کا پولیس اسٹیشن’’مصری شاہ‘‘ امن و امان کی ناقص صورتحال اور کرائم میں دیگر تھانوں سے ’’ٹاپ‘‘ کر گیا۔تھانہ کی خستہ حال عمارت اہلکاروں اور آنے والے سائلین کیلئے خوف کی علامت بن گئی۔ روزنامہ پاکستان کے سروے کے دوران تھانہ میں آنے والے سائلین کے ساتھ اہلکا ربھی پھٹ پڑے۔ اس موقع پر تھانہ میں سائلین کی شکایات پر درج ہونے والے مقدمات کا جائزہ لیا گیا تو اس بات کا انکشاف ہواکہ تھانہ میں گزشتہ 14ماہ 10دنوں کے دوران 2951شہری مقدمات کے اندراج کے لئے شکایات لیکر آئے ۔ پولیس نے صرف 1516شہریوں کی درخواستوں پر مقدمات درج کئے اور 1345شہریوں کی درخواستوں پر مقدمات درج کرنے کے بجائے ٹال دیا۔ تھانہ سے ملنے والے اعداد وشمار کے مطابق بڑھتی ہوئی آبادی کے پیش نظر تھانہ کی حدود میں امن و امان کی صورتحال انتہائی ناقص ہو چکی ہے۔ معمولی لڑائی جھگڑا ہو یادیرینہ رنجش، قتل و غارت اس علاقہ کی شناخت بن چکی ہے اور پولیس قتل و غارت میں ملوث مرکزی ملزمان پر ہاتھ ڈالنے کی بجائے مشورہ میں شامل ملزمان کو پکٹر کر ’’خانہ پری‘‘ پر لگی ہوئی ہے جس کے باعث قتل اور ڈکیتی قتل سمیت سنگین واقعات میں ملوث خطرناک اشتہاریوں کی تعداد ہر ماہ بڑھتی جا رہی ہے۔ پولیس ریکارڈکے مطابق دو ماہ قبل فاروق گنج میں دو گروپوں میں فائرنگ ہوئی اورایک پارٹی نے دوسری پارٹی کے ایک شخص کو قتل کیا۔ پولیس تاحال مرکزی ملزم کوگرفتار نہیں کر سکی ہے۔ ایک ماہ قبل حبیب گنج میں ایک نوجوان نے فائرنگ کر کے ایک نوجوان کو قتل کر دیا جس پر تاحال پورے علاقہ میں خوف و ہراس پایا جارہاہے۔ اس موقع پر سلطان پورہ ،تیزاب احاطہ ، فاروق گنج کے مکینوں احسن علی ، راجہ عابدعلی، اصغر علی ، تاجر اکبر علی دوکاندار نعمت علی ، امجد علی اور نشان علی سمیت دوست علی نے بتایاکہ آبادی دس لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے۔ ہر دوسرے گھنٹے کے بعد کوئی نہ کوئی واقعہ یا واردات ہوجاتی ہیور کئی کئی دن چکرلگانے پڑتے ہیں یا کوئی سفارش ہوتو مقدمہ درج ہوتاہے ۔ دوسری طرف تھانہ کے اہلکاروں کا کہناتھاکہ تھانہ کی عمارت کئی سال پرانی ہے ۔ کافی عرصے سے عمارت کی مرمت تک نہیں کروائی گئی ہے اور بوسیدہ عمارت میں داخل ہوتے ہوئے خوف آتاہے۔وہ بڑی پریشانی سے گزارا کر رہے ہیں ۔اس کے علاوہ نفری کی بھی شدید کمی ہے جس کے مقابلہ میں کرائم ی شرح زیادہ ہے ۔کوئی پرسان حال نہیں ہے۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...