پولیس 3افراد کو قتل کرنے والے ڈاکوگرفتار نہ کرسکی

پولیس 3افراد کو قتل کرنے والے ڈاکوگرفتار نہ کرسکی

جڑانوالہ (نامہ نگار)4روز گزرنے کے باوجود پولیس خونی ڈکیتی میں 3افراد کو قتل کرنے والے ڈاکوؤں کو گرفتار کرنے میں بری طرح ناکام ، موبائل ڈیٹا اکٹھا کرنے اور ملزمان کے خاکے کاغذی کارروائیوں تک محدود۔ مقتولین کے ورثا ء سے پولیس حکام ومنتخب نمائندوں نے رابطہ تک نہ کیا۔ ورثا کا چیف جسٹس آف پاکستان سے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ ۔ آر پی او بلال صدیق کمیانہ نے ایس پی سی آئی اے ناصر سیال سمیت دیگر کو آج رپورٹ سمیت طلب کرلیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق 4روز قبل حسین شوگر ملز میں تعینات کیشئر سردارملز سکیورٹی گارڈز ایوب اور یٰسین کے ہمراہ کیری ڈبہ میں نجی بنک سے نقدی لے کر جا رہے تھے کہ تھانہ سٹی کی حدود چرچ روڈ فاروق پارک کے قریب موٹر سائیکل سوار ڈاکوؤں نے نقدی لوٹنے کے بعد فائرنگ کرکے تینوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا اور فرار ہوگئے ۔ دوران ڈکیتی تین افراد کے قتل پر سی پی او فیصل آباد اطہر اسماعیل نے ایس پی سی آئی اے ناصر سیال کی قیادت میں ملزمان کو گرفتار کرنے کے لیے 2ٹیمیں تشکیل دیں جنہوں نے جائے وقوعہ پر جا کر موبائل ڈیٹا اکٹھا کیا اور حاصل ہونے والی ویڈیو سے ملزمان کے خاکے تیار کیے ۔ مگر 4روز گزرنے پر بھی پولیس تمام تر دعوؤں کے باوجود خونی ڈکیتی میں ملوث ملزمان کا سراغ لگانے میں بے بس دکھائی دے رہی ہے۔ جبکہ مقتولین کے ورثاء سے پولیس کے اعلیٰ حکام اور مقامی منتخب نمائندوں نے رابطہ کرنے کی زحمت تک نہ کی ۔ مقتولین کے ورثاء نے چیف جسٹس آف پاکستان سے از خود نوٹس لے کر انصاف و تحفظ کا مطالبہ کیا ہے۔ قابل ذکر امر یہ ہے کہ دوران ڈکیتی قتل ہونے والے سکیورٹی گارڈز یٰسین اور ایوب پاک فوج میں اپنے فرائض سرانجام دے چکے ہیں۔ دوسری جانب آر پی او فیصل آباد بلال صدیق کمیانہ نے ایس پی سی آئی اے ناصر سیال ، ایس پی ٹاؤن جڑانوالہ ،ڈی ایس پی جڑانوالہ اور ایس ایچ او سٹی کو آج رپورٹ سمیت اپنے آفس میں طلب کر لیا ہے۔

مزید : علاقائی