عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم مجاہد آفریدی پشاور منتقل

عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم مجاہد آفریدی پشاور منتقل
عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم مجاہد آفریدی پشاور منتقل

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)کوہاٹ میں میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کو پشاور پہنچادیا گیا۔ ڈی پی او کوہاٹ عباس مجید مروت نے میڈیا کے نمائندوں کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ عاصمہ کے قتل کیس میں مجاہد کا بھائی بھی نامزد ہے وہ اپنے دوست شاہ زیب کی مدد سے ملک سے فرار ہوا تھا۔ڈی پی او کوہاٹ عباس مجید مروت کا کہنا تھا کہ عاصمہ رانی کے قتل میں مجاہد اور اس کا بھائی صادق اللہ نامزد ہوئے تھے۔ملزم کا پاسپورٹ اور ویزہ تیار تھا، واقعے کے بعد وہ شاہ زیب کی مدد سے بیرون ملک فرار ہوا۔قتل میں استعمال ہونے والا پستول اور بائیک برآمد کی گئی ہے۔ڈی پی او کا کہنا تھا کہ ملزم مجاہد آفریدی کی گرفتاری کے لئے ایف آئی اے انٹرپول سے رابطے میں تھی۔ملزم کی گرفتاری کے لئے 152 ممالک کو ریڈ وارنٹ جاری کرکے اطلاع دی گئی تھی۔عرب امارات اور پاکستان کے حساس ادارے اور کوہاٹ پولیس رابطے میں تھے۔ڈی پی او نے بتایا کہ کیس کاچالان عدالت میں جمع کرادیا ہے۔ملزم مجاہد آفریدی کا کریمنل ریکارڈ پولیس کے پاس موجود ہے۔ان کا کہنا تھا کہ 3 فروری سے عاصمہ کے خاندان کو سیکورٹی فراہم کی ہے۔شریک ملزم شاہ زیب کا ضمانت کا کیس پشاور منتقل ہوا ہے۔

پشاور(این این آئی) ڈاکٹر عاصمہ رانی قتل کیس میں گرفتار ملزم مجاہدآفریدی کو دس روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ۔ڈاکٹر عاصمہ قتل کیس میں شارجہ سے گرفتار مرکزی ملزم مجاہد آفرید ی کو کوہاٹ میں جوڈیشل مجسٹریٹ کے عدالت میں پیش کر دیا گیا۔ عدالت نے ملزم کو دس روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا ملزم مجاہد نے 27جنوری کو میڈیکل کی طلبہ عاصمہ رانی کو رشتے سے انکار پر قتل کیا تھا جس کے بعد ملزم بیرون ملک فرار ہوا تھا۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...