بہاولنگر ‘ ن لیگ نے 3ناراض ارکان کو سبق سکھانے کیلئے حلقے توڑ دئیے

بہاولنگر ‘ ن لیگ نے 3ناراض ارکان کو سبق سکھانے کیلئے حلقے توڑ دئیے

بہاولنگر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)عام انتخابات سے قبل مسلم لیگ ن کی ایماء پر ڈپٹی کمشنر اور الیکشن کمیشن دفتر کی ملی بھگت سے حلقہ بندیاں توڑ دی گئیں ۔مسلم لیگ ن نے قومی اسمبلی کے تین(بقیہ نمبر51صفحہ12پر )

ناراض اراکین کو آئندہ انتخابات میں شکست خوردہ بنانے کے لئے حلقے توڑ دئیے ۔قانونگوئی کوٹ روڈھا سنگھ کا صوبائی حلقہ تبدیل جبکہ قومی حلقہ 167کی ایک قانونگوئی کوقومی حلقہ169میں شامل کردی گئی۔قومی حلقہ 167میں موجودہ ووٹرز کی تعداد 7لاکھ 64ہزار کے قریب کردی گئی۔مسلم لیگ ن کے سید اصغر شاہ گروپ کی ایماء پر میونسپل کمیٹی بہاولنگر کی حدود کو قومی حلقہ 166میں شمال کرنے کا منصوبہ بے نقاب ہوگیا۔ تفصیل کے مطابق الیکشن کمیشن پاکستان کی جانب سے بہاولنگر کے چار قومی اور آٹھ صوبائی حلقوں کے نمبر تبدیل کردئیے گئے ۔بہاولنگر نئے نمبر والے قومی حلقوں کا آغاز 166سے اور اختتام 169پر ہوا ۔اسی طرح اس کے صوبائی حلقوں کا آغاز 237سے اور اختتام 244پر ہوا ہے ۔غیرقانونی حلقہ بندیا ں توڑ کر پاکستان مسلم لیگ ن کے بہاولنگر میں قومی اسمبلی حلقہ کی نشست پر امیدوار کو 30سے40ہزار ووٹ جبکہ صوبائی پی پی حلقہ کی نشست پر امیدوار کو 20ہزار ووٹوں کا تحفہ گھر بیٹھے دیا گیا ہے ۔ نئی حلقہ بندیا ں زمینی حقائق کے منافی ہیں ۔نئی حلقہ بندیاں سیاسی جماعتوں کی مشاورت کے بغیر عمل میں لائی گئیں۔غیر حکومتی سیاسی جماعتوں نے بڑے پیمانے پر احتجاج کرنے کا منصونہ بنا لیا۔واضح رہے نئی حلقہ بندیوں کا ڈرافٹ ڈی سی ہاؤس پر ایک ہفتہ کی طویل جدوجہد کے بعد مکمل کیا گیا ۔ذرائع کے مطابق نئی حلقہ بندیوں میں بڑے پیمانے پر توڑ پھوڑ کی گئی ہے تاہم منظر پر آنے والی نئی حلقہ بندی میں قانونگوئی کوٹ روڈھا سنگھ کا صوبائی حلقہ تبدیل جبکہ قومی حلقہ 167کی ایک قانونگوئی کوقومی حلقہ169میں شامل کردی گئی۔ذرائع کی جانب سے یہ بھی دعویٰ کیا گیا ہے کہ نئی حلقہ بندیوں میں مزید تبدیلیاں بھی منظر عام پر آئیں گی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر