حکومت سندھ کا جامعات ترمیمی بل مسترد کرتے ہیں ایس ایف پی

حکومت سندھ کا جامعات ترمیمی بل مسترد کرتے ہیں ایس ایف پی

کراچی(اسٹاف رپورٹر )صدر و اراکین مرکزی کابینہ اسٹوڈنٹس فیڈریشن آف پاکستان نے حکومت سندھ کی جانب سے تیار کردہ سرکاری جامعات ترمیمی بل کو مکمل مسترد کرتے ہوئے کہا کے جامعات میں داخلہ پالیسی سمیت دیگر پالیسیاں بنانا ماہر تعلیم اور اساتذہ کا کام ہے،سیاسی اثرورسوخ کی بنیاد پر اساتذہ کرام اور تعلیمی اداروں کے اختیارات لینا اور شعبہ تعلیم میں سیاسی اثر و رسوخ سندھ میں تعلیم اور تعلیمی اداروں کو مزید نقصان پہنچانے کے مترادف ہے،انکا کہنا تھا کے سندھ میں گزشتہ برسوں کے دوران ایک ہزار ارب سے زائد تعلیم کے شعبہ پر خرچ کرنے کی دعویدار حکومت سندھ کی کارکردگی سرکاری جامعات میں فنڈز کی عدم موجودگی،سرکاری اسکولوں اور کالجز کی حالت زار دیکھ کر بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے کے سرکاری جامعات ترمیمی بل تعلیم دشمنی سے ذیادہ اور کچھ نہیں انکا مزید کہنا تھا کے 18ویں ترمیم کے بعد اختیارات صوبوں کو دیئے گئے ہیں،مگر وفاقی اور صوباء سطح پر شعبہ تعلیم کو مکمل سیاسی اثر و رسوخ سے پاک کرتے ہوئے حقیقی معنوں میں ماہر تعلیم کے سپرد کرنا چاہئے،

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...