’آدمی کی موت، دفنانے سے پہلے 2 خواتین رشتہ داروں نے اس کی لاش سے آنکھیں اور نازک اعضاعلیحدہ کئے اور انہیں۔۔۔‘ لاش کے ساتھ ایسا سلوک کہ پورے خاندان میں کھلبلی مچ گئی

’آدمی کی موت، دفنانے سے پہلے 2 خواتین رشتہ داروں نے اس کی لاش سے آنکھیں اور ...
’آدمی کی موت، دفنانے سے پہلے 2 خواتین رشتہ داروں نے اس کی لاش سے آنکھیں اور نازک اعضاعلیحدہ کئے اور انہیں۔۔۔‘ لاش کے ساتھ ایسا سلوک کہ پورے خاندان میں کھلبلی مچ گئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ہرارے(نیوز ڈیسک) مرنے والے کی عزت و تکریم دنیا کے ہر کلچر کا حصہ ہے لیکن زمبابوے میں دو خواتین نے اپنے مردہ عزیز کی لاش کے ساتھ رات کے اندھیرے میں ایسا بھیانک سلوک کر ڈالا کہ جان کر ہر کوئی حیران و پریشان رہ گیا ہے۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ڈیلی سٹار کے مطابق یہ رونگٹے کھڑے کردینے والا واقعہ زمبابوے کے دیہاتی علاقے نڈانگرا میں پیش آیا۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ مردہ شخص کی تدفین سے قبل رات کے وقت اس کی لاش گھر میں موجود تھی کہ اس کی قریبی رشتہ دار دو خواتین نے لاش کے مختلف اعضاءکاٹ کر علیحدہ کئے اور انہیں کھاگئیں۔

گاﺅں کے سرپنچ نے خوفناک واقعے کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ”میں اس بات کی تصدیق کرسکتا ہوں کہ نڈانگرا گاﺅں کی دو خواتین کو پنچایت میں بلایا گیا ہے کیونکہ ان پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنے ایک عزیز کی موت کے بعد اس کے جسم کے اعضاءکاٹے اور انہیں کھایا۔ مرنے والے کی لاش کو گھر کے باورچی خانے میں رکھا گیا تھا جہاں تدفین سے پہلے رات کے وقت یہ دونوں خواتین لاش کے پاس موجود تھیں۔ انہوں نے اپنے عزیز کی دونوں آنکھیں، گالوں کا گوشت اور جنسی اعضا کاٹ کر کھا لئے ہیں۔ اگلے دن تدفین کے وقت پتہ چلا کہ مردے کے جسم کے کچھ اعضاءغائب تھے جس پر ان دونوں خواتین کو پکڑلیا گیا۔ وہ دونوں ایک دوسرے پر الزام لگارہی ہیں لیکن یہ بات واضح ہے کہ انہوں نے لاش کی بے حرمتی کی ہے اور اس کے اعضاءکاٹ کر کھائے ہیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس