فٹ بال ورلڈ کپ کیلئے برازیل 30ہزار فوجی سرحدوں پر تعینات کریگا

فٹ بال ورلڈ کپ کیلئے برازیل 30ہزار فوجی سرحدوں پر تعینات کریگا

براسیلیا(آن لائن)برازیل نے آئندہ ماہ شروع ہونے والے عالمی کپ کی میزبانی کی تیاری کے پیش نظر اپنی سرحدوں کو محفوظ بنانے کیلئے تیس ہزار فوجیوں کی تعیناتی کا عمل گزشتہ روز شروع کردیا ہے،اس آپریشن میں فوج،بحریہ اور فضائیہ کے اہلکار شامل ہیں،جنہیں جنوبی امریکہ کے اس سب سے بڑے ملک کو اس کے دس ہمسایہ ممالک سے جدا کرنے والی 16886 کلومیٹر(10492میل) لمبی سرحد پر تعینات کیا جائے گا۔یہ بین الاقوامی مربوط کوشش جون2011ء میں صدر ڈلماروسوف کی طرف سے اعلان کئے جانے والے سٹرٹیجک بارڈر سیکورٹی پلان کا حصہ ہے۔حکومت کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ ملک کے شمال سے جنوب تک غیر قانونی سرگرمیوں کا مقابلہ کرنے کیلئے مملکت کی طرف سے اب تک کی جانے والی سب سے بڑی لام بندی ہے۔اس قسم کا ایک سیکورٹی آپریشن گزشتہ سال کے کنفیڈریشن کپ جسے ورلڈ کپ کے لئے بیجا اسراف کی آزمائش خیال کیا جاتا ہے سے قبل کیا گیا تھا۔عالمی کپ کے سلسلے میں بارہ شہروں میں فٹبال کے مقابلے ہوں گے۔دیگر جرائم کے علاوہ اس کارروائی کے تحت منشیات اور ہتھیاروں کی سمگلنگ کو ہدف بنایا جائے گا،اس کے علاوہ غیر قانونی ترک وطن پر بھی نظر رکھی جائے گی۔وزارت دفاع نے اس امر کی وضاحت نہیں کی ہے کہ یہ آپریشن کب تک جاری رہے گا،ایک ترجمان نے اے ایف پی کو بتایا کہ فوج مجرموں کو پیشگی انتباہ نہیں کرنا چاہتا ہے۔برازیل کی سرحد میں ارجنٹائن بولیویا ،کولمبیا، گیانا، پیبرا گوئے، پیرو، سری نام، یوراگوئے، وینز ویلا اور فرانسیسی گیانا سے ملتی ہیں۔ان میں سے نصف سے زائد زون، دریاؤں، جھیلوں اور دوسری آبی گزرگاہوں سے اٹی پڑی ہیں۔فیفا ورلڈ کپ12جون سے 13 جولائی تک ہوگا،توقع ہے کہ برازیل اس زبردست ایونٹ کیلئے چھ لاکھ سے زائد غیر ملکیوں کا خیرمقدم کرے گا جبکہ داخلی طور پر تیس لاکھ سے زائد مقامی افراد متاثر ہوں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی