بجٹ میں تمام بڑی کمپنیوں کیلئے کارپوریٹ ٹیکس میں کمی، چھوٹی کمپنیوں کے ٹیکس شرح میں اضافے کی تجویز

بجٹ میں تمام بڑی کمپنیوں کیلئے کارپوریٹ ٹیکس میں کمی، چھوٹی کمپنیوں کے ٹیکس ...

اسلام آباد(آن لائن )آئندہ مالی سال 2014-15کے بجٹ میں تمام بڑی کمپنیوں کیلئے کارپوریٹ ٹیکس میں کمی اور چھوٹی کمپنیوں کے ٹیکس شرح میں اضافے کی تجویز ہے جس سے نہ صرف اوسط سالانہ تین ہزارنئی کمپنیوں کا اضافہ متوقع ہے بلکہ اس سے کارپوریٹ سیکٹر اور معیشت کو دستاویزی شکل دینے کی حوصلہ افزائی ہوگی ۔ذرائع کے مطابق آئندہ مالی سال 2014-15کے بجٹ میں ان لسٹڈ(Unlisted )پبلک اینڈپرائیوٹ کمپنیوں کے قابل ٹیکس آمدنی پر 33فیصد ،کیش ڈیویڈنڈ دینے والی لسٹڈ کمپنیوں پر 31فیصد ،کیش دیویڈنڈ نہ دینے والی کمپنیوں پر 32فیصد جبکہ ایسوسی ایشنز آف پرسنز کی قابل ٹیکس آمدنی پر 29فیصد کی شرح سے ٹیکس عائد کرنے کی تجویز ہے اوراس وقت تمام تین قسم کی کمپنیوں پر 34فیصد کی یکساں شرح سے کارپوریٹ ٹیکس عائد ہے

جبکہ چھوٹی کمپنیوں پر 25فیصد کی شرح سے ٹیکس عائد ہے۔ذرائع کے مطابق ایسوسی ایشنز آف پرسنز کیلئے انکم ٹیکس ریٹ میں اضافے اور پرائیوٹ اورلسٹڈ کمپنیوں کیلئے ٹیکس ریٹ میں کمی کرنے سے کارپوریٹزایشن اور معیشت کو دستاویز ی شکل دینے کی حوصلہ افزائی ہوگی جبکہ اس سے اوسط سالانہ تین ہزارنئی کمپنیوں کا اضافہ ہوگا ۔اسی طرح کمپنیوں کی تعداد میں اضافے سے ٹیکس وصولیوں میںا ضافہ ہوگا۔ذرائع کے مطابق پاکستان میں 1992-93کے دوران بنکنگ،پبلک اور پرائیوٹ کمپنیوں پرچھیاسٹھ ،پچپن اور چوالیس فیصد کی شرح سے بلترتیب ٹیکس عائد تھا اور وقت گذر نے کیساتھ ساتھ ان ٹیکسز کی شرح میں بہت حد تک کمی کی گئی جبکہ اس کے مقابلے میں گزشتہ ایک دہائی کے دوران اوسط عالمی کارپوریٹ ٹیکس کی شرح 29اعشاریہ 3فیصد سے کم ہوکر 22اعشاریہ 96فیصد ہوگئی ۔

مزید : کامرس