ناقص کارکر دگی ودیگر الزامات پر22 پولیس اہلکارملازمت سے برطرف،15کوسزائیں

ناقص کارکر دگی ودیگر الزامات پر22 پولیس اہلکارملازمت سے برطرف،15کوسزائیں
ناقص کارکر دگی ودیگر الزامات پر22 پولیس اہلکارملازمت سے برطرف،15کوسزائیں

  


لاہور(کرائم سیل) سی سی پی او لاہور چوہدری شفیق احمد نے اختیارات سے تجاوز،کرپشن، پولیس حراست سے ملزم کی فراری، ناقص کارکردگی ، شہریوں سے بدسلوکی، فرائض سے غفلت، دانستہ طویل غیر حاضری اور اشتہاریوں کی گرفتاری میں ناکام رہنے پر 4 تھانیدار وں،13ٹریفک وارڈنز اور پانچ کانسٹیبلوں سمیت 22پولیس اہلکاروں کو ملازمت سے برطرف کر دیا ہے جبکہ7تھانیداروں سمیت 15ٍپولیس اہلکاروں کو عہدوں میں تنزلی تنخواہوں میں کمی اور سروس کی ضبطگی سمیت متعدد سزا ئیں دی ہیں۔ سی سی پی او نے 20پولیس اہلکاروں کی ا پیلیں منظور کر تے ہوئے انہیں مختلف پولیس افسران کی جانب سے دی جانے والی سزائیں ختم کر دی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق آڈرلی روم میں پولیس اہلکاروں کی اپیلیںاور شوز کاز نوٹسز کی جوابات سنتے ہوئے سی سی پی او نے پولیس حراست میں ہلاکت،کرپشن اور پولیس حراست سے ملزم فرار ہونے کے الزمات میں انسپکٹر ناصر محمود اور حامد محمود کے عہدوں میں تنزلی کرتے ہوئے انہیں ملازمت سے بر طرف کر دیا ہے۔ اسی طرح انہوں نے اختیارات سے تجاوز شہریوں سے بدسلوکی اور بددیانتی پر سب انسپکٹر محمد انوراور اے ایس آئی نوید احمد کو ملازمت سے برطرف کر دیا ہے سی سی پی اونے ٹریفک وارڈن محمد معصوم ، محمد محسن اشرف ،خالدعلی ، نسیم عباس،احمد فراز،محمد عرفان، عدنان خالد، عمر جاوید ، محمد نعمان، مقصود احمد ، اظہر لطیف، سلیم اللہ ، محمد سجاد اورکانسٹیبل نصراللہ ، محمد کاشف ، محمد وقاص، فرحان شہزاد اور حیدر علی کو کرپشن ،اختیارات سے تجاوز شہریوں سے بدسلوکی اور دانستہ غیرحاضری پر ملازمت سے برطرفی کی سزا دی ہے ۔چوہدری شفیق احمد نے ناقص کارکردگی اشتہاریوں کی گرفتاری میں ناکامی ناقص تفتیش اور فرائض سے غفلت پر انسپکٹر محمد اعظیم ، انسپکٹر قمر عباس، سب انسپکٹر محمدسرور،جعفر حسین،محمد رمضان عبدالرزاق،اے ایس آئی عبدالحمید ، ہیڈکانسٹیبل احمد علی اور کانسٹیبل ساجد محمود وغیرہ کو عہدوں میں تنزلی، تنخواہوں میں کمی، سروس کی ضبطگی اور شنشور کی سزائیں دی ہیں۔اُنہوں نے تین تھانیداروں سمیت 20اہلکاروں کے شوزکاز نو ٹسیسز کو فائل اور اپیلوں کو منظور کر تے ہوئے انکو مختلف پولیس افسران کی جانب سے عہدوں میں تنزلی، برطرفی،تنخواہوں میں کمی اور سروس کی ضبطگی سمیت دی جانے والی سزائیں ختم کر دی ہیں۔

مزید : لاہور