پاک ،ایران مشترکہ سرحدی کمیشن کے قیام سمیت 8معاہدوں اور مفاہتی یاداشتوں پر دستخط

پاک ،ایران مشترکہ سرحدی کمیشن کے قیام سمیت 8معاہدوں اور مفاہتی یاداشتوں پر ...
پاک ،ایران مشترکہ سرحدی کمیشن کے قیام سمیت 8معاہدوں اور مفاہتی یاداشتوں پر دستخط

  


تہران ( نیوز ڈیسک )پاکستان اور ایران نے مشترکہ سرحدی کمیشن کے قیام سمیت دو طرفہ تعاون کے 8معاہدوں اور مفاہتی یاداشتوں پر دستخط کر دئیے،دونوں ملکوں کا قیدیوں کے تبادلے،منی لانڈری کی روک تھام اور تجارت کے فروغ کے لئے موثر اقدامات اٹھانے کا فیصلہ۔دونوں ملکوں کے درمیان باہمی تعاون کے فروغ سے متعلق ان معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط وزیر اعظم نواز شریف کے دورہ ایران کے موقع پر ہوئے۔معاہدوں پر دستخطوں کی تقریب میں وزیر اعظم نواز شریف اور ایران کے اول نائب صدر اسحاق جہانگیری نے بھی شرکت کی۔پاکستان اور ایران کے درمیان منی لانڈرنگ کی روک تھام اور شماریاتی کاموں کیلئے مفاہمت کی یادداشت اور ثقافتی وفود کے تبادلے کے پروگرام کی تشکیل کے معاہدے پرپاکستان کی جانب سے وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور ایران کے وزیر برائے اقتصادی امور علی طیب نیا نے دستخط کئے جبکہ دونوں ممالک کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے پرپاکستان کی جانب سے مشیر خارجہ سرتاج عزیز اور ایران کے وزیر انصاف نے دستخط کیے۔بحری جہازوں سے پیدا ہونے والی آلودگی کی روک تھام کیلیے مفاہمت کی یادداشت پر وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی اور ایران کے وزیر مواصلات نے دستخط کیے۔دونوں ممالک کے درمیان کھیلوں میں تعاون کیلیے مفاہمت کی یادداشت پر وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی اور ایران کے وزیر کھیل نے دستخط کیے ۔ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان اور ایران کی عالمی نمائش کمپنی کے درمیان مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے گئے جس کا مقصد تجارت کا فروغ ہے ۔قبل ازیں دونوں ملکوں کے درمیان وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے جن میں پاکستانی وفد کی قیادت وزیر اعظم نواز شریف اور ایرانی وفد کی قیادت ایران کے اول نائب صدر اسحاق جہانگیری نے کی۔

مزید : قومی /اہم خبریں