ہمیں علم ہے کہ یمنی معزول صدر علی عبداللہ صالح رات کو کہاں قیام کرتا ہے اور دن کو کدھر ہوتا ہے:اتحادی فوج کے ترجمان جنرل احمد حسن عسیری

ہمیں علم ہے کہ یمنی معزول صدر علی عبداللہ صالح رات کو کہاں قیام کرتا ہے اور دن ...
ہمیں علم ہے کہ یمنی معزول صدر علی عبداللہ صالح رات کو کہاں قیام کرتا ہے اور دن کو کدھر ہوتا ہے:اتحادی فوج کے ترجمان جنرل احمد حسن عسیری

  


جدہ (محمد اکرم اسد/ بیورو چیف) یمن میں جاری آپریشن کے اتحادی فوج کے ترجمان جنرل احمد حسن عسیری نے کہا ہے کہ ہمیں علم ہے کہ یمنی معزول صدر علی عبداللہ صالح رات کو کہاں قیام کرتا ہے اور دن کو کدھر ہوتا ہے۔ سعودی عرب اس بات کا انتظار نہیں کرے گا کہ ایران یمن کو ہڑپ کرے گا۔ ایران کے عزائم کسی سے بھی چھپے نہیں ہیں، وہ عرب اور خلیج ممالک پر تسلط چاہتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب کی قیادت اتحادیا فواج میں مصری افواج سے یہ نہیں کہا کہ وہ یمن میں کوئی بڑی کارروائی کریں۔ ہم یمن میں زمینی کارروائی کے لئے یمنی افواج پر ہی بھروسہ کرتے ہیں کیونکہ وہ اس کی پوری صلاحیت رکھتی ہے۔ یمنی افواج اتحادی افواج کے لئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔ معزول یمنی صدر کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ہماری خفیہ رپورٹس بڑی مصدمہ ہیں۔ عبداللہ صالح رات کو ہاں قیام کرتا ہے۔ متروکہ سفارت خانوں اور خالی ہوجانے والے سفراءکے گھر والوں کو شب بسریٰ کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ معزول صدر نے بچے کے لئے سفارتخانوں کا استعمال شروع کیا ہوا ہے۔ وہ اس امر سے واقف ہے کہ ان سفارت خانوں سے ہمارے بھی تعلقات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یمن میں اتحادی افواج کی جانب سے کارروائی یمنی لوگوں کو بچانا ہے، یمن کو فتح کرنا نہیں۔ عسیری نے کہا کہ اتحادی افواج کے پائلٹ اپنے ہدف کو نشانے بنانے میں بڑے ماہر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عرب اور خلیجی ریاستوں میں ایران کے عزائم سے ہر کوئی اچھی طرح واقف ہے۔ ایران خطے پر قابض ہونا چاہتا ہے۔ اس حوالے سے شام، لبنان، عراق اور یمن میں اس کا رویہ اور آئندہ کے ارادوں سے سب واقف ہیں۔ ایران تسلط حاصل کرنے والے کسی بھی ملک کی معاشی اور معاشرتی کے برعکس صرف مسلح ملیشیاءہی کھڑی کرتا ہے۔ ایران کی جانب سے یمنیوںکے لئے کوئی امداد نہیں کی گئی۔ داعش کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ سعودی عرب دہشت گردی کی ہر سطح پر بھرپور مذمت کرتا ہے۔ داعش اور اس جیسی سب تنظیموں کے خلاف ہے۔ اتحادی افواج سعودی عرب کی سربراہی میں اس قسم کے دہشتگردوں کی بیخ کنی کے لئے کام کرتی رہیں گی۔

مزید : عرب دنیا


loading...