ٹیکنیکل کالج کی جگہ کی خریدو فروخت سے میرا کوئی تعلق نہیں،میاں منیر

ٹیکنیکل کالج کی جگہ کی خریدو فروخت سے میرا کوئی تعلق نہیں،میاں منیر

لاہور(جنرل رپورٹر) انجمن حمایت اسلام کے اہم رہنما اور سابق رکن قومی اسمبلی میاں منیر نے کہا ہے کہ شاہدرہ میں حمایت اسلام شہاب الدین ٹیکنیکل انسٹی ٹیوٹ کی جگہ پر قبضہ کرنے والوں یا خرید و فروخت کرنے والوں سے میرا کوئی تعلق نہیں اور نہ ہی یاسین گجر میرا فرنٹ مین ہے اور نہ ہی اس سے میرا کوئی تعلق ہے ۔انجمن نے مجھے ایک ذمہ داری سونپی تھی جو واپس لے لی ہم انجمن کے زیر اہتمام چلنے والے اداروں کی فلاح و بہبود کے لیے دن رات کام کرتے رہے ہیں اور کریں گے وہ پاکستان سے گفتگو کر رہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ یاسین گجر نامی شخص سے ایک معاہدہ ہوا تھا جس میں اس نے کچھ حصہ فروخت کر کے آمدن انجمن کو دینی تھی انہوں نے ہمیں بتایا کہ وہ پونے دو کروڑ روپے انجمن کو دے چکے ہیں در حقیقت جنہیں یہ ذمہ داری سونپی گئی تھی کہ وہ کچھ حصہ فروخت کریں گے اور اس سے تقریبا 6کروڑ روپے آمدن ہو گی بعد میں معلوم ہوا کہ انہوں نے بعض جگہوں پر ہیرا پھیری کی جس کی شکایات سامنے آنے پر ہم نے نہ صرف کام رکوا دیا بلکہ انجمن کے پلیٹ فارم سے عدالت میں بھی گئے ہیں اب یہ کہنا کہ میرا دکانیں تعمیر کرنے والوں سے کوئی تعلق ہے اس میں کوئی حقیقت نہیں ہے ۔میں کل بھی انجمن کی فلاح و بہبود کے لیے کام کرتا تھا ،آج بھی کرتا ہوں اور کرتا رہوں گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...