پی کے 8 پشاور میں ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ، ضابطہ اخلاق کی کھلی خلاف ورزی

پی کے 8 پشاور میں ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ، ضابطہ اخلاق کی کھلی خلاف ورزی
پی کے 8 پشاور میں ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ، ضابطہ اخلاق کی کھلی خلاف ورزی

  


پشاور(ویب ڈیسک) خیبر پختونخوا اسمبلی کے حلقے پی کے 8 میں ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ کا عمل جاری ہے جب کہ مختلف حلقوں میں الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی کھلی خلاف ورزی دیکھی گئی۔خیبر پختونخوا اسمبلی کے حلقے پی کے 8 پشاور میں ضمنی انتخاب کے لئے پولنگ کا عمل صبح 8 بجے شروع ہوا جو شام 5 بجے تک بلا تعطل جاری رہے گا تاہم کئی حلقوں میں الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی کھلی خلاف ورزی دیکھی گئی جہاں سیاسی کارکن کھلے عام اسلحہ لہراتے رہے جب کہ کئی پولنگ سٹیشنز پر بدانتظامی کے باعث خواتین نے ووٹ ڈالنے سے انکار کردیا۔ حلقے میں رجسٹرڈ ایک لاکھ 36 ہزار 500 ووٹرز کے لئے 98 پولنگ سٹیشنز قائم کئے گئے ہیں جس میں سے 47 پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ پی کے 8 کے ضمنی انتخاب کے دوران 4 ہزار پولیس اہلکار بھی تعینات کئے گئے ہیں جب کہ الیکشن کمیشن کے مطابق آر اوز اور ڈی آر اوز کی درخواستوں پر حلقے کے 24 پولنگ سٹیشنز میں فوجی اہلکار تعینات کئے گئے ہیں۔ پی کے 8 کے ضمنی الیکشن کے لئے مجموعی طورپر15 امیدوارمیدان میں ہیں تاہم مسلم لیگ (ن) ، تحریک انصاف اور جمعیت علما اسلام (ف) کے امیدواروں کے درمیان کانٹے کے مقابلے کی توقع ہے۔ واضح رہے کہ پی کے 8 کی نشست مسلم لیگ (ن) کے ارباب اکبر حیات کے انتقال کے بعد خالی ہوئی تھی۔

مزید : پشاور


loading...