انٹرپول کے سابق صدر مینگ ہونگوے پر رشوت کا الزام ،فرد جرم عائد

انٹرپول کے سابق صدر مینگ ہونگوے پر رشوت کا الزام ،فرد جرم عائد

بیجنگ( آن لائن ) انٹرپول کے سابق صدرمینگ ہونگوے پر رشوت وصول کرنے کے الزام میں چین میں فردِ جرم عائد کردی گئی۔ وہ گزشتہ برس ستمبر میں فرانس میں انٹرپول کے ہیڈ کوارٹر سے چین گئے جہاں سے وہ لاپتہ ہو گئے۔وہ حکمران جماعت کمیونسٹ پارٹی کی جانب سے بطور پبلک سیکیورٹی کے نائب وزیر بھی تھے،ان پر الزام ہے کہ اپنے اہلِ خانہ کے پرتعیش لائف اسٹائل کو برقرار رکھنے کیلئے اپنے اختیارات کا غلط استعمال کیا۔ انٹرپول کی سربراہی کے دوران انہوں نے وزارت کا عہدہ بھی برقرار رکھا تھا۔ پراسیکیوٹر کے دفتر سے جاری ہونے والے اعلان میں کہا گیا کہ مین ہونگوے نےبطور سربراہ انٹرپول غیر قانونی طور پر دوسروں کو فائدہ پہنچانے کے لیے رقم اور املاک حاصل کیں، اس حوالے سے انٹر پول کو آگاہ نہیں کیا گیا اور اسے چین سے مینگ ہونگے کے بارے میں دریافت کرنے کے لیے باضابطہ طور پر درخواست کرنی پڑی۔صدر شی جنگ پنگ بدعنوانی اور وفاداری سے پھرنے والوں کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاﺅن کررہے ہیں۔ مینگ ہونگے کی اہلیہ اپنے 2 سالہ بیٹے کے ساتھ فرانس میں ہی مقیم ہیں جہاں ان کے شوہر انٹرپول میں تعینات تھے۔

انٹرپول

مزید : علاقائی