امریکی نائب صدر نے حفاظتی اقدامات کے تحت خود کو قرنطینہ کر لیا

امریکی نائب صدر نے حفاظتی اقدامات کے تحت خود کو قرنطینہ کر لیا

  

واشنگٹن(این این آئی)امریکی نائب صدر مائیک پینس نے اپنی ایک معاون کے کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے بعد خود کو الگ تھلگ رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی نائب صدر کی پریس سیکرٹری کیٹی ملر میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد نائب صدر نے دو روز تک گھر میں الگ تھلگ رہنے کا فیصلہ کیا۔ قبل ازیں وائٹ ہاؤس کے ایک اور اہلکار میں کورونا کی تصدیق ہونے کے بعد کورونا ٹاسک فورس کے تین اعلیٰ اہلکار بھی قرنطینہ میں چلے گئے تھے۔ ان میں ڈاکٹر اینتھونی فاؤچی شامل ہیں، جو امریکا میں الرجی اور متعدی بیماریوں کے قومی انسٹیٹیوٹ کے ڈائریکٹر بھی ہیں۔ امریکی بحریہ کے سربراہ ایڈمرل مائیک گیلڈے وائٹ ہاؤس کورونا وائرس ٹاسک فورس کے بعض ممبران میں کورونا کی تشخیص کے بعد سیلف قرنطینہ میں چلے گئے۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق وائٹ ہاؤس کورونا وائرس ٹاسک فورس کے تین اراکین میں کورونا ٹیسٹ کے مثبت نتائج آنے کے بعد امریکی بحریہ کے سربراہ نے ان افراد کے ساتھ رابطے میں رہنے کے باعث سیلف قرنطینہ اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ امریکی عہدیدار نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ اگرچہ ایڈمرل مائیک کو کورونا ٹیسٹ منفی آیا ہے تاہم انہوں نے احتیاطی تدابیر کے طور پر ایک ہفتہ کے لئے قرنطینہ اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

امریکی بحریہ چیف

حفاظتی اقدامات

مزید :

صفحہ اول -