کرونا ریلیف فنڈمیں شاعروں‘ ادیبوں‘ صحافیوں کو شامل کیاجائے‘ ظہور دھریجہ

  کرونا ریلیف فنڈمیں شاعروں‘ ادیبوں‘ صحافیوں کو شامل کیاجائے‘ ظہور دھریجہ

  

ملتان (سٹی رپورٹر)کورونا فنڈ میں شاعروں، ادیبوں اور صحافیوں کو شامل کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان قومی کونسل کے صدر ظہور دھریجہ نے شاعروں،ادیبوں سے ملاقات کے دوران کیا۔ وفد میں ریاض حامد فریدی، رمضان قادری، لیاقت قریشی اور اسلم حجانہ شامل تھے۔ وفد سے ملاقات کے موقع پر ظہور دھریجہ نے کہا کہ شاعروں، ادیبوں اور صحافیوں کی بہت خدمات ہیں، صحافی وہ طبقہ ہے جو کورونا جنگ میں فرنٹ لائن پر لڑ رہا ہے، انہوں نے کہا کہ کورونا لاک ڈاو?ن(بقیہ نمبر35صفحہ6پر)

کی وجہ سے گھروں میں فاقے ہیں، حکومت گلوکاروں کے ساتھ ساتھ شاعروں، ادیبوں اور صحافیوں کو بھی کورونا امدادی پیکیج میں شامل کرے۔ انہوں نے کہا کہ ریڈیو پاکستان نے پورے ملک میں مقامی نشریات بند کرکے اسلام آباد اسٹوڈیو سے پروگرام ریلے کر رہا ہے، حالانکہ کورونا آگاہی کیلئے مقامی زبانوں میں پروگرام نہایت ضروری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نیا مالی سال ختم ہونے والا ہے، صوبائی سیکرٹریٹ کیلئے بجٹ میں رکھے گئے تین ارب روپے میں سے ابھی تک ایک روپیہ بھی خرچ نہیں ہوا۔جو کہ وسیب کے لوگوں سے بد ترین مذاق ہے۔ سرائیکی رہنماو?ں نے بلوچستان میں دہشت گردی کے واقعے کی مذمت کی اور پاک فوج کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے دہشت گردوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ میلسی کینال کے وین حادثہ میں 11 افراد کی شہادت اور دریائے چناب میں پانچ افراد کے ڈوب جانے کا واقعہ غیر معمولی نوعیت کا ہے، ہمارا مطالبہ ہے کہ ورثا کو حکومت معاوضہ ادا کرے۔ انہوں نے کہا کہ سرائیکی صوبے کے قیام کیلئے جدوجہد جاری رہے گی کہ جب تک صوبہ سرائیکستان کا قیام عمل میں نہیں آتا، وسیب کے مسئلے حل نہیں ہونگے۔

ظہور دھریجہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -