آسان اقساط پر بزنس‘کرونا ایشو نظر انداز‘ غنڈوں کے زریعے ریکوری شروع

  آسان اقساط پر بزنس‘کرونا ایشو نظر انداز‘ غنڈوں کے زریعے ریکوری شروع

  

وہاڑی(بیورورپورٹ،نامہ نگار)شہر اور گرد ونواح میں آسان اقساط کے نام پر ضروریات زندگی فروخت کرنے والے اداروں اوردکانداروں نے تمام کاروبارزندگی ٹھپ ہوجانے کے باوجوداقساط کی ریکوری مہم شروع کررکھی ہے اس مقصدکیلئے پہلے فون کالز،میسجزکئے جاتے (بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

ہیں اس کے بعداپنے غنڈوں ٹائپ لوگوں کے ذریعے قسطوں پراشیاء ضروریہ لینے والوں کوہراساں کرناشروع کردیا جاتا ہے جوکہ ان کے گھروں میں بار بار چکر لگا کرنہ صرف گاؤں محلہ میں ان کی عزت نفس مجروح کر رھے ہیں بلکہ مرے کومارے شاہ مداروالامعاملہ کئے ہوئے ہیں اس دوران اگرکسٹمراپنی مشکلات کاذکرکردے تواس کے ساتھ بدتمیزی کرنے کے ساتھ ساتھ خطرناک نتائج کی دھمکیاں بھی دیتے ہیں قسطوں پراشیائخریدنے والوں کی اکثریت دیہاڑی دار،مزدورطبقہ اورغریبوں پرمشتمل ہے جوکہ مسلسل لاک ڈاؤن کی وجہ سے پہلے ہی مشکلات سے دوچارہیں۔شہریوں حافظ خالدقریشی،عبدالستار،محمدجمیل،خدابخش،خادم حسین،محمدوریام،غضنفرعلی،بابرعلی،وارث علی،مشتاق احمد،مبشراحمدودیگر پریشان حال لوگوں نے بتایاقسطوں پرسامان دینے والے جب سامان دیتے ہیں اتنی اپنائیت کااظہارکرتے ہوئے کہتے ہیں آپ کوہماری طرف سے کوئی پریشانی نہیں ہوگی آسانی سے قسطیں اداکرتے رہناان کی چکنی چپڑی باتوں سے متاثرہوکرضرورت منداشیائلے لیتاہے اوردکاندارمجبوری کاناجائزفائدہ اٹھاتے ہوئیاصل قیمت سے بھی کئی گناہ زیادہ قیمت پرسامان حوالے کردیتے ہیں ان کاکہناتھاکہ لاک ڈاؤن سے پہلے ہرماہ بلاناغہ ہرماہ قسطیں اداکرتے رہے ہیں لیکن موجودہ صورتحال میں مالی مشکلات کی وجہ سے قسطیں ادانہیں کرپارہے ہیں ان حالات میں ان دکانداروں کے ہاتھوں شدیدپریشان ہیں حالانکہ حکومت نے حکم دے رکھاہے کہ کرایہ داروں کوان حالات میں مجبورنہ کیاجائے جبکہ حکومت نے بھی یوٹیلٹی بلوں میں عوام کوریلیف دیاہے لیکن قسطوں پرعوام کواشیائفروخت کرنے والوں نے غریبوں کارات دن کاسکون بربادکرکے رکھ دیاہے ہم ان سے رقم معاف نہیں کرارھے صرف قسطیں وصول کرنے کوموخرکرنے کی درخواست کررھے ہیں جس کے جواب میں دھمکیاں سننے کوملتی ہیں انہوں نے چیف جسٹس آف لاہورہائی کورٹ،وزیراعلی سردارعثمان بزدار،کمشنرملتان اورڈپٹی کمشنرسے نوٹس لیتے ہوئے قسطیں موخرکرنے کاحکم جاری کرنے کامطالبہ کیاہے اورخلاف ورزی کے مرتکب دوکانداروں کے خلاف کاروائی کی جائے۔

ریکوری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -