چینی بحران پرتحقیقات، کمیشن نے اسد عمر کی درخواست منظور کرلی، وہ کام کردیا جس کی شاید کسی کو توقع نہ ہو

چینی بحران پرتحقیقات، کمیشن نے اسد عمر کی درخواست منظور کرلی، وہ کام کردیا ...
چینی بحران پرتحقیقات، کمیشن نے اسد عمر کی درخواست منظور کرلی، وہ کام کردیا جس کی شاید کسی کو توقع نہ ہو

  

اسلام آباد(ویب ڈیسک) چینی کے بحران پر بنائے گئے تحقیقاتی کمیشن نے وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کو آج طلب کرلیا ہے, یادرہے کہ اسد عمر نے شاہد خاقان عباسی کے مطالبے پر  کہا تھا کہ  کمیشن سے درخواست ہے کے مجھے ضرور بلایا جائے، اگر سوال ہے تو مجھ سے پوچھا جائے، وزیراعظم سے نہیں اور اب کمیشن نے بلا لیا۔ 

ایکسپریس نیوز کے مطابق ایف آئی اے کے ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ چینی بحران کے لیے ایف آئی اے کے تشکیل کیے گئے تحقیقاتی کمیشن نے اسد عمر کو آج صبح طلب کیا ہے اور انہوں نے بھی کمیشن کے سامنے پیش ہونے پر آمادگی ظاہر کردی ہے۔

اس سے قبل وفاقی وزیر نے بیان دیا تھا کہ چینی تحقیقاتی کمیشن وزیراعظم عمران خان کو نہیں لیکن مجھے ضرور بلائے۔ انہوں نے ٹوئٹ میں کہا تھا کہ نون لیگ کے رہنما شاہد خاقان نے مطالبہ کیا ہے کہ مجھے اور وزیراعظم عمران خان کو چینی کی قیمتوں میں اضافے کی تحقیقات کرنے والے کمیشن کے سامنے بلاکر چینی برآمد کرنے کی اجازت کے فیصلے کے بارے میں پوچھ گچھ کرنی چاہیے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ کابینہ نے یہ فیصلہ اقتصادی رابطہ کمیٹی کی سفارش پر کیا تھا، اگر کوئی سوال ہے تو وزیراعظم سے نہیں بلکہ مجھ سے پوچھا جائے، کمیشن سے درخواست ہے کہ مجھے ضرور بلائے۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے اور چیئرمین انکوائری کمیشن واجد ضیا کو خط لکھ کر آٹا اور چینی بحران کی تحقیقات میں مکمل تعاون و معاونت کی پیش کش کی تھی جسے قبول کرتے ہوئے کمیشن نے انہیں بلایا تھا۔

شاہد خاقان عباسی اور خرم دستگیر تین روز قبل انکوائری کمیشن کے سامنے پیش ہوئے تھے جس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا چینی کی قیمتیں ای سی سی اور کابینہ کی وجہ سے بڑھیں جس کی ذمہ دار حکومت ہے، ہم نے کمیشن سے کہا ہے کہ وزیراعظم، ای سی سی اور کابینہ کے ممبران کو بلا کرپوچھا جائے کہ ایکسپورٹ کو روکا کیوں نہیں گیا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -