ڈونلڈ ٹرمپ ایک مرتبہ پھر صحافیوں سے لڑ پڑے، دو خواتین صحافیوں کے سوالات پر آگ بگولا ہوگئے

ڈونلڈ ٹرمپ ایک مرتبہ پھر صحافیوں سے لڑ پڑے، دو خواتین صحافیوں کے سوالات پر آگ ...
ڈونلڈ ٹرمپ ایک مرتبہ پھر صحافیوں سے لڑ پڑے، دو خواتین صحافیوں کے سوالات پر آگ بگولا ہوگئے

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ ایک بار پھر صحافیوں کے ساتھ الجھ پڑے، دو خواتین صحافیوں کے سوالات پر آگ بگولہ ہو کر پریس کانفرنس ہی ختم کر دی۔ میل آن لائن کے مطابق صدر ٹرمپ نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ”یہ بے لگام میڈیا میرے خلاف سازش کر رہا ہے۔“ پریس کانفرنس میں سی بی ایس کی رپورٹ ویجا جیانگ نے صدر ٹرمپ سے سوال پوچھا کہ ”کورونا وائرس سے 80ہزار سے زائد امریکی شہری مر چکے ہیں۔ ایسے میں وہ کورونا ٹیسٹنگ کو عالمی کھیل کی طرح کیوں لے رہے ہیں؟“اس پر صدر ٹرمپ نے ویجا جیانگ سے کہا کہ ”آپ یہ بات چین سے پوچھیں۔“

اس کے بعد سی این این کی رپورٹ کیٹلین کولنز نے صدر ٹرمپ سے سوال پوچھنا چاہا لیکن صدر ٹرمپ نے غصے میں پریس کانفرنس ہی ختم کر ڈالی۔ کیٹلین کولنز کے ساتھ اس سے پہلے بھی صدر ٹرمپ کی تلخی ہو چکی ہے۔ بعد ازاں صدر ٹرمپ ٹوئٹر پر آئے اور میڈیا پر برس پڑے۔ انہوں نے ایک ٹویٹ میں طنز کرتے ہوئے مین سٹریم میڈیا کو لیم سٹریم میڈیا لکھا اور کہا کہ ”یہ لیم سٹریم میڈیا سچ مچ بے لگام ہو چکا ہے۔دیکھیں وہ سب کیسے مل کر سازشیں کررہے ہیں۔یہ لوگ عوام کے دشمن ہیں۔“امریکہ کے صدارتی امیدوار برنی سینڈرزنے اس ٹویٹ پر صدر ٹرمپ کو آڑے ہاتھوں لیا اور اپنی جوابی ٹویٹ میں لکھا کہ ”آج پریس کانفرنس میں ہونے والی تلخی قابل افسوس ہے۔ صدر موصوف ایسے بزدل شخص ہیں جو دوسروں کے پرخچے اڑا کر خود کو طاقتور محسوس کرتے ہیں۔“

مزید :

بین الاقوامی -