آن لائن کلاس کے دوران طالب علموں کو فحش فلمیں بھیجنے والے طالب علم مشکل میں پھنس گئے

آن لائن کلاس کے دوران طالب علموں کو فحش فلمیں بھیجنے والے طالب علم مشکل میں ...
آن لائن کلاس کے دوران طالب علموں کو فحش فلمیں بھیجنے والے طالب علم مشکل میں پھنس گئے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں آن لائن کلاس لیتے دو طالب علم دوسرے طالب علموں کو فحش فلمیں بھیجتے ہوئے پکڑے گئے۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ طالب علم 10کلاس میں پڑھتے تھے اوران کا تعلق بھارتی شہر اعظم گڑھ کے ایک پرائیویٹ انگلش میڈیم سکول سے تھا۔ اس روز12ویں کلاس کی تین لڑکیاں آن لائن نہیں ہوئی تھیں چنانچہ ان دسویں جماعت کے طالب علموں نے ان لڑکیوں کی شناخت سے سائن ان کیا اور ان کی آن لائن کلاس لینی شروع کر دی اور اس دوران خاتون ٹیچر اور دوسرے طالب علموں کو فحش فلمیں بھیجنی شروع کر دیں۔

خاتون ٹیچر نے بتایا کہ”میں واٹس ایپ پر انگریزی کی کلاس لے رہی تھی جب مجھے کلاس کی دو لڑکیوں کی ریکوئسٹ موصول ہوئی اور میں نے انہیں بھی گروپ میں شامل کر لیا۔ گروپ میں شامل ہوتے ہی ان میں سے ایک لڑکی نے انتہائی نازیبا میسج بھیج دیا۔ جب میں نے اس کی سرزنش کی تو دوسری لڑکی نے فحش فلم کا ایک کلپ پوسٹ کر دیا۔ اس کے بعد وہ دونوں شروع ہو گئیں اور پے درپے نازیبا ویڈیوز پوسٹ کرنے لگیں۔ میں فوری طور پر گروپ سے نکل گئی اور معاملے سے پرنسپل کو آگاہ کر دیا۔“

رپورٹ کے مطابق سکول کے پرنسپل نے ان لڑکیوں اور ان کے والدین سے بات کی اور انہوں نے جب یقین دلایا کہ وہ اس روز کلاس میں شامل ہی نہیں ہوئیں تو پرنسپل نے پولیس کو رپورٹ کر دی۔ پولیس نے جب تحقیقات کیں تو انکشاف ہوا کہ یہ حرکت دسویں کلاس کے دو لڑکوں کی تھیں۔ پولیس حکام کا کہنا تھا کہ ”ہم نے ان دونوں اکاﺅنٹس کی لوکیشن ٹریس کی اور ان کی نگرانی شروع کر دی۔ وہ دونوں اسی سکول کی دسویں جماعت کے لڑکے نکلے جن کے خلاف ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے اور انہیں گرفتار کرکے جووینائل ہوم بھجوا دیا گیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -