اپنی خارش مٹانے کے لیے بھینسے نے 800 گھروں کو بجلی سے محروم کردیا

اپنی خارش مٹانے کے لیے بھینسے نے 800 گھروں کو بجلی سے محروم کردیا
اپنی خارش مٹانے کے لیے بھینسے نے 800 گھروں کو بجلی سے محروم کردیا

  

ایڈنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) آدمی کو جسم پر کہیں خارش ہونے لگے تو غیرارادی طور پر اس کا ہاتھ اس جگہ پر کھجانے کے لیے بڑھتا ہے اور جب تک وہ کھجا نہ لے اسے چین نہیں پڑتا۔ اب حضرت انسان توباآسانی کھجا سکتا ہے لیکن اگر کھجلی کسی جانور کو ہو توپھر وہ بیچارہ کیا کرے۔ اب اس بھینسے کو ہی دیکھ لیں جس کو کھجلی ہوئی اور وہ اپنے جسم کو کھجانے کے چکر میں 800گھروں کی بجلی معطل ہونے کا سبب بن گیا۔

ویب سائٹ timesnownews.com کے مطابق یہ واقعہ سکاٹ لینڈکے علاقے ساﺅتھ لینارک شائر میں پیش آیا ہے جہاں اس بھینسے کو جسم پر خارش اور اس نے قریب لگے بجلی کے کھمبے کے ساتھ کھجانا شروع کر دیا۔ اسی کھمبے پر ٹرانسفارمر رکھا ہوا تھا جو بھینسے کے کھجانے سے زمین پر آ رہا۔ ٹرانسفارمر کے ساتھ تار بھی زمین پر آ گرے لیکن خوش قسمتی سے بھینسا اس 11ہزار وولٹ کے جھٹکے سے محفوظ رہا تاہم اس ٹرانسفارمر سے جن 800گھروں کو بجلی جا رہی تھی انہیں کئی گھنٹوں کے لیے شدید تکلیف میں مبتلا رہنا پڑ گیا۔

ایک خاتون ہیزل لافٹن نے فیس بک پر ایک پوسٹ میں اس بھینسے کی تصویر پوسٹ کی ہے اور علاقہ مکینوں سے معافی مانگتے ہوئے بتایا ہے کہ یہ بھینسا ان کا تھا جس نے ٹرانسفارمر گرایا اور کئی دیہات کی بجلی معطل ہو گئی۔اس بھینسے کا نام ’رون‘ تھا لیکن اب ٹرانسفارمر گرانے کے بعد ہم سوچ رہے ہیں کہ اس کا نام ’سپارکی‘ رکھ دیں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -