انٹرپول نےمطلوب امریکی سفارتکار کی اہلیہ کو ریڈ نوٹس جاری کر دیا

انٹرپول نےمطلوب امریکی سفارتکار کی اہلیہ کو ریڈ نوٹس جاری کر دیا
انٹرپول نےمطلوب امریکی سفارتکار کی اہلیہ کو ریڈ نوٹس جاری کر دیا

  

لندن(ڈیلی پاکستان آن لائن)انٹرنیشنل کرمنل پولیس آرگنائزیشن (انٹرپول) نے امریکی سفارتکار کی اہلیہ اینی ساکولاس کی گرفتاری کیلئے ریڈ نوٹس جاری کیا ہے جس پر گزشتہ سال برطانیہ میں ایک کار حادثے میں ایک نوجوان کے قتل کا الزام عائد ہے۔ہیری ڈنن اس وقت ہلاک ہوا جب گزشتہ سال 27 اگست کو اس کی موٹرسائیکل اور کار کے درمیان نارتھمپٹن شائر میں ایک امریکی فوجی اڈے کے باہر تصادم ہوا تھا،کار کی ڈرائیور ساکولاس سفارتی استثنی حاصل کرکے امریکہ واپس چلی گئی اور اس کے بعد برطانیہ کی کران پراسیکیوشن سروس نے اس پر خطرناک ڈرائیونگ سے موت کا سبب بننے کا الزام عائد کیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق ساکولاس کے شوہر ایک انٹیلیجنس عہدیدار ہیں جو وسطی برطانیہ میں ایک امریکی فوجی اڈے پر کام کرتے ہیں۔امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے جنوری میں محکمہ داخلہ کی جانب سے حوالگی کی درخواست کو مسترد کر دیا تھا جس کی برطانیہ کی جانب سے شدید مخالفت کی گئی تھی۔برطانیہ کی جانب سے امریکی انکار کو '' انصاف سے انکار'' سے تشبیہ دی گئی اور حکومت کی جانب سے اظہار مایوسی کرنے کیلئے برطانیہ میں امریکی سفیر کو طلب کیا گیا۔برطانوی سکریٹری خارجہ ڈومینک راب نے اپنے ایک پہلے بیان میں کہا، ہمیں یہ انصاف سے انکار کے مترادف محسوس ہے اور ہمارا موقف ہے کہ اینی ساکولاس کو برطانیہ واپس آنا چاہئے۔ اب ہم فوری طور پر اپنے آپشنز پر غور کر رہے ہیں۔مفرور افراد کو یا تو قانونی چارہ جوئی کے لئے یا سزا سنانے کیلئے ریڈ نوٹس جاری کیے جاتے ہیں، انٹرپول نے اپنی سرکاری ویب سائٹ پر وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ایک ریڈ نوٹس دنیا بھر میں قانون نافذ کرنے والے اداروں سے درخواست ہے کہ وہ حوالگی، ہتھیار ڈالنے یا اسی طرح کی قانونی کارروائی کے ذریعے سے کسی شخص کی تلاش اور اس کو گرفتار کریں۔

دوسری طرف مقامی میڈیا کے مطابق ساکولاس کا معاملہ امریکہ اور برطانیہ کے مابین خصوصی تعلقات میں کانٹا بنا ہوا ہے اور اس نے قومی سلامتی سے غیر وابستہ معاملات میں سفارتی استثنی کی حدود پر مباحثے کو جنم دیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -