بھارت میں ایک ماہ کے دوران 50 سے زائد صحافی کورونا سے ہلاک ہوگئے

بھارت میں ایک ماہ کے دوران 50 سے زائد صحافی کورونا سے ہلاک ہوگئے

  

 دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک)کورونا کی دوسری لہر بھارتی صحافیوں کیلئے بھی خطرناک ہوگئی ہے، ایک ماہ میں فرنٹ لائن پر کام کرنیوالے 50 سے زائد صحافی کورونا سے ہلاک ہوچکے ہیں۔عالمی ادارہ صحت نے کورونا کی بھارتی قسم کو عالمی سطح پر تشویش کا باعث قرار دے دیا۔ بھارت میں 24 گھنٹوں میں کورونا کے مزید تین لاکھ 29 ہزار متاثرین رپورٹ ہوئے ہیں جب کہ تین ہزار 800 سے زیادہ افراد جان کی بازی ہار گئے۔ ریاست آندھرا پردیش کے سرکاری ہسپتال میں آکسیجن نہ ملنے پر 11 مریض دم توڑ گئے۔ علی گڑھ مسلم یونی ورسٹی کے کیمپس میں 18 دن میں 34 اساتذہ اور ریٹائرڈ عملے کی کورونا کے باعث اموات رپورٹ ہوئی ہیں۔ دریائے گنگا میں تیرتی لاشیں سامنے آنے پر اطراف کے گاؤں میں خوف اور تشویش پھیل گئی ہے۔  ریاست گجرات سمیت بھارت کے دیگر علاقوں میں کورونا سے بچاؤ کیلئے گائے کے گوبر کا استعمال کیا جارہا ہے، جبکہ طبی ماہرین خبردار کرچکے ہیں کہ کورونا میں گائے کے گوبر کی افادیت کا کوئی سائنسی ثبوت نہیں، اس سے دیگر بیماریاں پھیلنے کا خطرہ ہے۔

 صحافی ہلاک

مزید :

صفحہ آخر -