لیہ بداخلاقی کیس: درندوں کا گھیرا تنگ، متاثرہ طالبات کی فیملیز سے رابطے کا حکم 

لیہ بداخلاقی کیس: درندوں کا گھیرا تنگ، متاثرہ طالبات کی فیملیز سے رابطے کا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

  

 ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر)لیہ میں جی سی یونیورسٹی طالبہ بد اخلاقی کا نشانہ بنا کر ویڈیواورتصاویر سے (بقیہ نمبر12صفحہ6پر)
بلیک میل کرنے کے مقدمہ میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے آر پی او فیصل رانا نے گروہ کی ہوس کا شکار ہونے والی دیگر طالبات کی فیملیز سے رابطے کی ہدایات جاری کر دیں، ملزمان کی ایک ایک گھناؤنی واردات کا مقدمہ درج کیا جائے،سماجی مسائل کہ وجہ سے اگر کوئی فیملی مدعی نہیں بننا چاہتی پولیس اس وقوعہ کی مدعی بنے گی،ان خیالات کا اظہار ریجنل پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد فیصل رانا نے لیہ میں طالبہبداخلاقی کیس کی فالو اپ بریفنگ لیتے ہوئے کیا،ڈی پی او لیہ ندیم رضوی نے آر پی او کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پولیس اس وقوعہ کے تمام قبیح کرداروں کو سامنے لا رہی ہے، متاثرہ طالبہ کا میڈیکل بھی کروایا گیا ہے، آر پی او فیصل رانا نے کہا کہ  لیہ طالبہبداخلاقی کیس کو بنیاد بنا کر پولیس خفیہ طریقے سے ان تمام فیملیز کے ساتھ رابطہ کرے جن کی بچیاں ملزمان کی ہوس کا شکار بنیں،آر پی او نے کہا کہ یہ سراغ لگانے وقت پولیس سماجی  اقدار کو ہر حوالے سے ملحوظ خاطر رکھے، اگر متاثرہ فیملیز سماجی دباواور مسائل کی وجہ سے مقدمات کے مدعی نہ بنیں تو ان مقدمات کی مدعی پولیس بنے گی،آر پی او نے ڈی پی او کو ہدائت کی کہ ملزمان کی باقاعدہ گرفتاری کے بعد ان کے موبائلز سے برہنہ ویڈیوز اور تصاویر ریکور کی جائیں اس حوالے سے آر پی او آفس کی آئی ٹی برانچ ہمہ وقت کام کرے گی،ادھر سماجی حلقوں نے طالبات کی عزتیں لوٹنے والے گروہ کا سراغ لگانے پر پولیس کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ  اس طرح کے معاشرتی ناسوروں کو قانون کے ذریعے عبرتناک سزا دلوائیں گے۔
کیس