ہارون آباد، خاتون قتل، جلی لاش برآمد، پولیس کارروائی شروع

ہارون آباد، خاتون قتل، جلی لاش برآمد، پولیس کارروائی شروع

  

ہارون آباد (نامہ نگار) ہارون آباد میں گھر سے خاتون کی تشدد شدہ اور جلی ہوئی نعش برآمد ہوئیمقتولہ تین بچوں کی ماں تھی، میری ہمشیرہ کو اُس کے خاوند کے پہلی (بقیہ نمبر30صفحہ6پر)

بیوی نے اپنے بھائیوں کیساتھ مل کر تشدد کرکے جلا کر قتل کیا ہے، مقتولہ کے بھائی کا الزام، پولیس نے نعش ہسپتال منتقل کر دی تفصیلات کے مطا بق تھانہ صدر پولیس ہارون آباد کی حدود میں چک 33تھری آر میں ایک گھر کے کچن سے رضیہ بی بی زوجہ محمد حسین کی تشدد شدہ اور جلی ہوئی نعش برآمد ہوئی، اطلاع ملنے پر تھانہ صدر پولیس ہارون آباد موقع پر پہنچ گئی اور نعش کو ہسپتال منتقل کردی اور مقتولہ کے بھائی عا بد حسین سکنہ 200مراد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا، ایف آئی آر میں مقتولہ کے بھائی عابد حسین نے الزام عائد کیا ہے کہ اُس کی بہن رضیہ بی بی کو اُس کے خاوند محمد حسین کی پہلی بیوی منور بی بی نے اپنے بھائیوں ارشاد علی، خالق علی، عالم شیر اور شازیہ بی بی زوجہ محمد سجاد نے تشدد کرنے کے بعد گیس سلنڈر کے چولہے سے چہرہ،گردن اور سر کے بال جلا کر قتل کردیا ہے، وجہ عناد یہ ہے کہ میری ہمشیرہ رضیہ بی بی کی شادی محمد ارشد سکنہ 428سکس آر سے ہوئی جو چار سل قبل سعودی عرب میں فوت ہوگیا ہے، میری ہمشیرہ کی دو بیٹیاں اور ایک بیٹا ہے، محمد ارشد کے بھائی محمد حسین کی شادی منور بی بی سے ہوئی جس سے کوئی اولاد نہ ہوئی تو چھ ماہ قبل محمد حسین نے میری ہمشیرہ کیساتھ شادی کرلی، اس رنج کی بنا پر ملزمان منور بی بی، شازیہ بی بی، ارشاد علی، خالق علی اورعالم شیرنے تشدد کرکے جلا کر ناحق قتل کیا ہے۔پولیس مصروف تفتیش ہے۔

کارروائی شروع

مزید :

ملتان صفحہ آخر -