موت کی وادی میں گھومنے والی حاملہ ماں زندگی کی طرف لوٹ آئی

موت کی وادی میں گھومنے والی حاملہ ماں زندگی کی طرف لوٹ آئی
موت کی وادی میں گھومنے والی حاملہ ماں زندگی کی طرف لوٹ آئی

  

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) زندگی اور موت کا راز ایسا معمہ ہے جو انسان کے زہن سے بالاتر ہے اور بسا اوقات ایسے کرشمے رونما ہو جاتے ہیں جو عقل انسانی کو حیرت میں ڈال دیتے ہیں۔ایک ایسا ہی سمجھ سے بالاتر کرشمہ امریکی ریاست فلوریڈا میں وقوع پزیر ہوا جہاں ایک خاتون ہیسنال میں آپریشن کے دوران بے جان ہو گئی اور 45منٹ بعد جب ڈاکٹر اس کی موت کا باقاعدہ اعلان کرنے والے تھے تو وہ ایسے ہی جی اٹی گویا کہ گہری نیند سے بیدار ہو رہی تھی۔خاتون کو زچکی کیلئے بوکا رٹین ریجنل ہسپتال لایا گیاتھاجہاں اس کا آپریشن کیا جارہا تھا کہ ایمنیو ٹیک فلورائیڈ نامی نامی مادہ اس کے دوران خون میںشامل ہو کر سارے جسم میں پھیل گیا۔ جس کے نتیجہ میں وہ بے حس و حرکت ہو گئی۔ہسپتال کے نمائندہ تھامس چکر دے کا کہنا ہے کہ 40سالہ خاتون روبی کے ساتھ پیش آنے والا حادثہ عام طور پر مہلک ثابت ہوتا ہے اور ڈاکٹروں نے اس بات کی وضاحت نہیں کر سکے کے 45منٹ تک بے جان رہنے کے بعد کیسے دوبارہ زندگی کی طرف لوٹ آیا۔ ان کا کہنا ہے کہ ڈاکٹروں نے بھر پور کوشش کی لیکن وہ جانبر نہ ہو سکی۔

 اور پھر جب وہ اس کے خاندان کو موت کی اطلاع دینے کے لئے بلوا چکے تھے تو اچانک اس کی نبض چلنا شروع ہو گئی۔روبی کے ہاں اس آپریشن کے دوران ایک بچی بھی پیدا ئش ہوئی اور آج دونوں ماں بیٹی بھر پور زندگی گزار رہی ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -