توانائی کے شعبے کے گرد شی قرضے ایک بار پھر 5کھرب روپے تک پہنچ گئے

توانائی کے شعبے کے گرد شی قرضے ایک بار پھر 5کھرب روپے تک پہنچ گئے ...

  

    کراچی(آن لائن)ملک میں گزشتہ 15 ماہ کے دوران توانائی کے شعبے کے گردشی قرضوں کاحجم ایک بار پھر 500ارب روپے کی سطح تک جا پہنچا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق حکومت نے جون 2013 میں 500ارب روپے کی خطیر رقم ادا کر کے توانائی کے شعبے کے گردشی قرضوں سے چھٹکارہ پالیا تھا لیکن محض 15 ماہ کے عرصے میں ہی ماہانہ تقریباً33ارب روپے کے حساب سے بڑھ کر یہ قرض ایک بار پھر 5 کھرب روپے کی سطح پر پہنچ چکا ہے۔ اِن میں زیادہ تر رقم اوور بلنگ کی ہے جس کی تحقیقات کیلئے وزیر اعظم نے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ حکومت بجلی چوری کے خاتمے کے ساتھ سستے ذرائع سے بجلی کی پیداوار جلدشروع کرے تاکہ قومی خزانے کے کھربوں روپے ہڑپ کرنے والے ان قرضوں سے جان چھڑا کر قومی خزانے کو عوامی فلاحی منصوبو ں پر خرچ کیا جاسکے۔

مزید :

کامرس -