واسا کا آمدن بڑھانے کیلئے صنعتی یونٹوں میں میٹر لگانے کا فیصلہ

واسا کا آمدن بڑھانے کیلئے صنعتی یونٹوں میں میٹر لگانے کا فیصلہ

  

                                                         لاہور(جاوید اقبال) واسا نے ادارہ کو اپنے پاﺅں پر کھڑا کرنے کے لئے آمدن بڑھانے کے لئے نیا پلان تیار کر لیا ہے جس کے تحت کمرشل اور انڈسٹریل صارفین کے لئے شکنجہ تیار کر لیا گیا ہے جن کے تمام ان میٹرڈ کنکشن پر میٹر لگائے جائیں گے پہلے مرحلے میں 12ہزار 600کمرشل اور فیکٹریوں میں پانی کے میٹر لگائے جائیں گے میٹر لگانے کا کام آج سے شروع ہو گا دوسرے مرحلے میں ہر ٹاﺅن اور سرکل کی سطح پر پانی کے ان رجسٹرڈ کنکشنوں پر پانی کے میٹر لگانے کا سروے ایک ماہ میں مکمل کیا جائے گا اور رپورٹ وائس چیئرمین اور ایم ڈی کو پیش کی جائے گی80فیصد تک ریکوری کا ٹارگٹ پورا کرنے والے ریونیو کے عملے کو اوسطاً اعزازیہ دیا جائے گا اس کی منظوری گزشتہ روز وائس چیئرمین شہباز چودھری کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس کے بعد ایم ڈی واسا نصیر چودھری نے دے دی بتایا گیا کہ گزشتہ روز اجلاس میں ڈائریکٹر ریونیو سمیت دیگر افسروں نے رپورٹ دی کہ واسا کا خسارہ کم کرنے کے لئے آمدن بڑھانا ہو گی جس کا واحد طریقہ پانی کے کنکشنوں پر میٹر لگانا ہے جس کا آغاز کمرشل کنکشنوں پر میٹر لگانے سے کیا جائے گا جس کی منظوری دیدی گئی کمرشل یونٹوں پر میٹر لگانے سے بل کمرشل ریٹس پر وصول کئے جائیں گے یہ بات سامنے آئی کہ بعض کمرشل یونٹس نے پانی کے کنکشن گھریلو استعمال کے لئے حاصل کر رکھے ہیں اور پانی کا استعمال کمرشل بنیادوں پر کیا جا رہا ہے ایسے کنکشن کی تعداد ہزاروں میں ہے اور پورا اندرون شہر اور دیگر علاقے ایسے کنکشنوں سے بھرے پڑے ہیں جن پر فیصلہ کیا گیا کہ ایسےکمرشل یونٹس پر کمرشل میٹر لگانے کا کام آج سے شروع کر دیا جائے گا۔ اس حوالے سے ایم ڈی واسا نصیر چودھری نے ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں پہلے مرحلے میں پانی کے تمام کمرشل کنکشنوں پر میٹر لگائے جائیں گے دوسرے مرحلے میں گھریلو کنکشن بھی میٹرڈکئے جائیں گے پانی کے کمرشل اور گھریلو کنکشن پر ریٹس میں اضافی ریٹس نہیں ڈالے جائیں گے انہوں نے کہا کہ ریونیو جمع کرنے کا کام جنگی بنیادوں پر کیا جائے گا۔ ڈوبے ہوئے واجبات کی وصولی کا کام شروع کر دیا گیا ہے اس ضمن میں کوئی سفارش قبول نہیں کی جائے گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -