حکومت محنت کش طبقے کی داد رسی کے لئے کوشاں ہے،اشفاق سرور

حکومت محنت کش طبقے کی داد رسی کے لئے کوشاں ہے،اشفاق سرور

  

لاہور(خبر نگار)صوبائی وزیر محنت راجہ اشفاق سرور نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب جبری مشقت کے شکار استحصال زدہ محنت کش طبقے کی داد رسی ، کم از کم اجرت پر عملدرآمد یقینی بنانے اور پیشگی سسٹم کے خاتمے کے لئے آئی ایل او ، صوبائی محکموں اور تمام سٹیک ہولڈرز کی بھر پور مشاور ت سے لائحہ عمل تشکیل دے رہی ہے انہوںنے یہ بات دربار ہال سول سیکرٹریٹ میں جبری مشقت کے خاتمے کے لئے بنائی گئی کابینہ کمیٹی کے چیئر مین کی حیثیت سے تیسرے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی رکن صوبائی اسمبلی میاں محمد رفیق ، سیکرٹری لیبر فرحان عزیز خواجہ ، سیکرٹری ہیومن ریسورس و اقلیتی امور جاوید اقبال چوہدری ، جنرل سیکرٹری آل پاکستان ورکرز کنفیڈریشن خورشید احمد خان ،ڈی جی لیبر ویلفیئر ، جنرل سیکرٹری بانڈڈ لیبر لبریش فرنٹ سیدہ غلام فاطمہ ،ممبر صفدر علی ، سینئر پروگرام آفسیر آئی ایل او سید صغیر بخاری ، لاہور چیمبرز آف کامرس انڈسٹری ، محکمہ قانون ، محنت، سوشل ویلفیئر اور دیگر متعلقہ اداروں کے افسران نے اجلاس میں شرکت کی اجلاس میں صوبہ پنجاب میں جبری مشقت کے خاتمے کے لئے مزدور و تاجر تنظیموں ، مختلف محکموں اور تمام سٹیک ہولڈرز کی مشارت سے لیبر قوانین میں مجوزہ ترامیم اور حتمی لائحہ عمل کی منظوری دی گئی اجلاس کو بتایا گیا کہ بھٹہ مزدوروں کی خوشحالی ، قومی شناختی کارڈ کے اجرا ،سوشل سیکورٹی سہولیات کی فراہمی اور کام کی جگہ پر جانی تحفظ یقینی بنانے کے لئے مختلف تجاویز زیر غو رآئیں تھیں جنہیں کمیٹی کی منظوری کے بعد مزید کارروائی کے لئے متعلقہ حکام تک پہنچایا جائے گا وزیر محنت راجہ اشفاق سرور نے کہا کہ معاشرے کے ہر فرد کا اخلاقی ، دینی اور قومی فریضہ ہے کہ بین الاقوامی قوانین کی توثیق کے پیش نظر جبری مشقت کی حوصلہ شکنی کی جائے اور بھٹوں پر کام کرنے والے محنت کشوں کی عزت نفس بحال کرنے کے لئے جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ کرتے ہوئے مشینری کے استعمال کی حوصلہ افزائی کی جائے-

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -