وکلاءکا کوٹہ میں انسداد دہشتگردی کورٹ کے جج پر حملہ کرنیوالے دہشتگردوں کی گرفتاری کا مطالبہ

وکلاءکا کوٹہ میں انسداد دہشتگردی کورٹ کے جج پر حملہ کرنیوالے دہشتگردوں کی ...
وکلاءکا کوٹہ میں انسداد دہشتگردی کورٹ کے جج پر حملہ کرنیوالے دہشتگردوں کی گرفتاری کا مطالبہ

  

                             لاہور(نامہ نگار)کوئٹہ کے علاقہ میں انٹی ٹیررازم کورٹ کے جج نذیر احمد پر دہشت گردوں کی جانب سے قاتلانہ حملے پر انتہائی دکھ کا اظہار کرتے ہوئے اس واقع کی بھرپور مذمت کی ہے ،نوجوان وکلاءنے اس میں ملوث ملزمان کی فوری گرفتاری کا بھی مطالبہ کیا ہے اور حکومت وقت سے ججز کی سیکیورٹی مزید فول پروف بنانے کی اپیل کی ہے ۔سینئرایڈووکیٹ مدثر چودھری اورارشاد گجرنے کہا کہ وطن عزیز میں دہشت گردوں کے حملوں سے اب عدلیہ کے ججز بھی محفوظ نہیں ہیں تو پھر عام آدمی کی سیکیورٹی حکومت کے لئے ایک سوالیہ نشان بن چکی ہے ،انہوں نے مزید کہا کہ ملک کو افراتفری‘ لاقانونیت اور خانہ جنگی جیسی صورتحال جیسے مسائل درپیش ہیں لیکن ہمارے سیاستدان صرف اپنی جیبیں بھرنے میں مصروف ہیں جو انتہائی افسوس ناک امر ہے ۔ایڈووکیٹ ہمایوں اظہربھٹی ، مرزا حسیب اسامہ ،غلام مجتبی چودھری اورعمران جاویدنے کہا کہ دہشت گرد ان کے حوصلے پست نہیں کرسکتے ہیں وہ فوج کی دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں لیکن موجودہ حکومت کے دور میں قوم و ملک جس کرب و ابتلا میں مبتلا ہیںاس سے پہلے ایسی دگرگوں صورتحال کا سامنا نہیں تھا ۔وکلاءبرادری کا مزید کہناتھا کہ ججز اوروکلاءکاتحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے لیکن حکومت اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے میں ناکام ہوچکی ہے ۔انہوں نے کہا کہ وہ اس قاتلانہ حملے کی شدید مذمت کرتے ہیں اور حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فوری اس میں ملوث ملزمان کو گرفتار کیا جائے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -