تھر میں حکمرانوں نے سنجیدہ اقدامات نہیں کئے ، خرم نواز گنڈا پور

تھر میں حکمرانوں نے سنجیدہ اقدامات نہیں کئے ، خرم نواز گنڈا پور

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان عوامی تحریک کے سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور نے تھر پارکر میں قیمتی انسانی جانوں کی ہلاکت،خاص کر بچوں کی اموات،خشک سالی اور قحط سالی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ تھر میں قحط سالی کا ذکر گذشتہ ایک سال سے سن رہے ہیں مگر افسوس سندھ اور وفاقی حکومت نے اس کےلئے کوئی سنجیدہ اقدامات نہیں کئے ۔40سال اقتدار کے مزے لوٹنے والوں نے تھر کے مجبور عوام کےلئے کچھ بھی نہیں کیا ۔اس عظیم انسانی المےے کی ذمہ دار اور مجرم دونوں حکومتیں ہیں ۔تھر پارکر کے متعدد دیہاتوں کے ہزاروں مہاجرین خشک سالی،بھوک،افلاس،خسرہ،سانس کی بیماریاں اور دیگر مسائل کی بنا پر نقل مکانی کر کے دیگر شہرو ں کا رخ کر رہے ہیں جبکہ وفاقی و صوبائی حکومتوں نے ”ختم فسانہ ہو گیا“ کہ مصداق رسم ادا کی اور تھر پارکر کے باسیوں کےلئے حسب روایت کچھ جھوٹے اعلانات کئے اور عوام کو سسکتا،بلکتا چھوڑ کر یہ جا وہ جا۔وہ گذشتہ روز منہاج ویلفیئر فاﺅنڈیشن کے تحت تھر پارکر کے حالات کا جائزہ لینے کےلئے بلائے گئے اہم اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔

انہوںنے کہا کہ قحط زدہ لوگ سندھ دھرتی اور پاکستان کے باسی ہیں۔محض ذمہ داری قبول کرتے ہوئے فوٹو سیشن کروانے سے نا انصافیوں کا ازالہ نہیں ہو سکتا ،ایک دو افسران کو قربانی کا بکرا بنا کر معطل کرنے سے ذمہ داریاں ختم نہیں ہو جاتیں ،تھر پارکر میں خسرے کی وباءپچھلے کئی سالوں سے پھیل رہی ہے جسے تمام حکمران مسلسل نظر انداز کرتے رہے اور ان معصوم پاکستانیوں سے نا انصافیاں ہوتی رہیں ہیں ۔

 خرم نواز

مزید :

علاقائی -