کوئٹہ ،جج کے قافلے کے قریب دھماکہ 13سالہ بچہ جاں بحق 25افراد زخمی

کوئٹہ ،جج کے قافلے کے قریب دھماکہ 13سالہ بچہ جاں بحق 25افراد زخمی

  

                                کوئٹہ(اے این این)کوئٹہ میں زرغون مارکیٹ کے قریب دھماکہ،13سالہ بچہ جاں بحق25زخمی ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق کوئٹہ میں ڈبل روڈ دھماکے میں ایک 13سالہ بچہ جاں بحق، 25افراد زخمی ہوگئے۔پولیس کے مطابق دھماکہ ڈبل روڈ پر زرغون مارکیٹ کے قریب اس وقت ہوا جب وہاں سے انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج نذیر احمد لانگو اور ڈی ایس پی شالکوٹ شفقت جنجوعہ کا قافلہ گزر رہا تھا ۔تاہم جج اور ڈی ایس پی کی گاڑیاں اور وہ خود تو دھماکے سے محفوظ رہے۔ جج کے کانوائے کی گاڑی کو جزوی نقصان پہنچا اور اس کے نتیجے میں ان کی سکیورٹی پر معمور دو اہلکار زخمی ہوگئے۔دھماکے کی زد میں آکر ایک تیرہ سالہ بچہ اور پچیس دیگر افراد زخمی ہوگئے۔ان میں سے دو زخمیوں کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔پولیس کے مطابق دھماکہ خیز مواد ڈبل روڈ پر کھڑی کار میں نصب کیاگیاتھا۔دھماکے کے نتیجے میں دس گاڑیوں اور متعدد دکانوں کو نقصان پہنچا۔واقعہ کے بعد پولیس ، ایف سی اور امداد ی ٹیمیں موقع پر پہنچ گئیں اور زخمیوں کو سول اسپتال منتقل کردیاگیا۔واقعہ کی مزید تحقیقات جاری ہیں۔پولیس کے مطابق یہ کہنا قبل ازوقت ہوگا کہ دھماکے میں کسے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی۔دوسری جانب گورنر ووزیراعلی بلوچستان نے دھماکے کی شدید مذمت کی ہے اور وزیراعلی نے آئی جی پولیس سے واقعہ کی فوری رپورٹ طلب کر لی ہے۔ ایس ایس پی آپریشنز اعتزاز حسین گورایا نے دھماکے کی جگہ کا دورہ کرتے ہوئے میڈیا سے بات چیت میں بتایا کہ دھماکے کا نشانہ بظاہر انسداد دہشت گردی کے جج نذیر احمد لانگو تھے تاہم ابھی تفتیش جاری ہے۔ بم ڈسپوزل سکواڈ کے مطابق گاڑی میں نصب بم چالیس سے پچاس کلو وزنی تھا۔ بم ڈسپوزل سکواڈ نے سرچ کے بعد علاقے کو کلیئر قرار دے دیا ہے۔ پولیس کے مطابق دھماکے میں بارہ سے پندرہ سال کا ایک نوجوان جاں بحق ہو گیا ہے جبکہ زخمی افراد کو سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ دھماکے کے نتیجے میں پولیس کی چھ گاڑیوں اور مارکیٹ کی دکانوں کو نقصان پہنچا۔ قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔

مزید :

صفحہ آخر -