پبلک ہیلتھ انجینئر نگ ڈیپارٹمنٹ ایمپلائی کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی میں بے ضابطگیا ں

پبلک ہیلتھ انجینئر نگ ڈیپارٹمنٹ ایمپلائی کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی میں بے ...

  

لاہور(اپنے نمائندے سے)پبلک ہیلتھ انجینئر نگ ڈیپارٹمنٹ ایمپلائی کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی لمیٹڈ پرائیویٹ لاہور کے ایگزیٹو ممبر ز کے خلاف کمیشن فر اڈ ،فنڈ ز کا غیر قانونی استعمال اور بڑے پیمانے پر کی جانے والی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہونے پر ڈسٹرکٹ کو آپریٹو آفیسر لاہور نے اسسٹنٹ رجسٹرار کی سربراہی میں انکوائری کمیشن تشکیل دیتے ہوئے 15دن کے اندر رپورٹ طلب کر لی ،روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ ایمپلائی کو آپریٹو سوسائٹی کے ایگزیٹو ممبرز پر لگائے جانے والے الزامات کے مطابق وسیع پیمانے پر کیمشن فراڈ،فنڈز کا غیر قانونی اور بے جا استعمال اور بڑے پیمانے پر کی جانے والی فنڈز میں بے ضابطگیا ں شامل ہیں جس پر ڈسٹرکٹ کوآپریٹو آفیسر نے ان الزامات کی انکوائری کیلئے فوری طورپر کوآپریٹو سوسائٹی کے ایکٹ سیکشن 4اور 44Aمجریہ 1925کے تحت اسسٹنٹ رجسٹرار کو آپریٹو سوسائٹی محمد سرفراز کو انکوائری آفیسر مقرر کر دیاہے جو کہ 15دن کے اندر مندرجہ بالا الزامات کی انکوائری کرکے رپورٹ پیش کر یں گے ،ڈسٹرکٹ آفیسر کو آپریٹو محمد اقبال کے مطابق مندرجہ بالا تمام الزامات نہائت سنجیدہ اور مفاد عامہ سے متعلق ہیں ،سوسائٹی اور سوسائٹی ممبرز کی بہتری کیلئے فوری طور پر انکوائری کمیشن تشکیل دینے کا مقصد جلد از جلد حقائق سے پردہ اٹھا کر اس میں ملوث ممبران کو قانون کے کٹہرے میں لانا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -