تھر میں بھوک کا نہیں ’زچگی‘ کا مسئلہ ہے، سائیں قائم علی شاہ کی نئی منطق

تھر میں بھوک کا نہیں ’زچگی‘ کا مسئلہ ہے، سائیں قائم علی شاہ کی نئی منطق
تھر میں بھوک کا نہیں ’زچگی‘ کا مسئلہ ہے، سائیں قائم علی شاہ کی نئی منطق

  

مٹھی (مانیٹرنگ ڈیسک) اندرون سندھ کے علاقے تھرپارکر میں غذائی قلت کے سبب کم عمر بچوں کی ہلاکتوں پر تبصرہ کرتے ہوئے وزیر اعلی سندھ سید قائم علی شاہ کا کہنا ہے کہ تھر میں بھوک کا کوئی مسئلہ نہیں ہے بلکہ اصل مسئلہ تو ’زچگی‘ کا ہے اور حکومت کا زچگی سے کچھ لینا دینا ہی نہیں ہے، ہماری طرف سے ہسپتالوں میں ہر ممکن سہولت دی گئی ہے مگر تھر میں زچگی ہسپتالوں میں نہیں جھگیوں میں ہوتی ہے۔ کابینہ کے خصوصی اجلاس کی صدارت کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے سائیں نے کہا کہ اگر ہسپتال میں لیڈی ڈاکٹر موجود نہ ہو تو حکومت ذمہ دار ہو گی مگر یہاں تو ہسپتال میں بچے لائے ہی اس وقت جاتے ہیں جب ان کی حالت بالکل نازک ہو چکی ہوتی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں وزیر اعلی سندھ نے کہا کہ محکمہ صحت نے 20 سال سے تھر کو نظر انداز کئے رکھا ہے، میرا سوال تو متحدہ قومی موومنٹ کے صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر صغیر احمد سے ہے کہ آکر کیا وجہ تھی کہ وہ پچھلے تین سال سال اس علاقے میں آئے ہی نہیں ہیں؟ اور اگر وہ یہاں آ جائیں گے تو لوگ ان کو پہچانیں گے ہی نہیں۔اس سے قبل بھی وزیر اعلی سندھ تھر پارکر میں کم عمر بچوں کی ہلاکت کی وجہ ’غربت‘ کو قرار دے چکے ہیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -