میاں صاحب! عمران خان سے مذاکرات کر لیں، یہ پیشکش پھر نہیں آئے گی: شیخ رشید احمد

میاں صاحب! عمران خان سے مذاکرات کر لیں، یہ پیشکش پھر نہیں آئے گی: شیخ رشید ...
میاں صاحب! عمران خان سے مذاکرات کر لیں، یہ پیشکش پھر نہیں آئے گی: شیخ رشید احمد

  

ننکانہ صاحب(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ یہ حکومت دعویٰ کرتی ہے کہ ہمیں دھرنے کی وجہ سے کوئی فرق نہیں پرا مگر وزیر اعظم نواز شریف کو لندن اور برلن میں بھی دھرنا ہی دکھائی دیا ، میران ان کو مفت مشورہ ہے کہ عمران خان سے مذاکرات کریں ورنہ یہ قوم انتقام کا نعرہ لگا دے گی ، شاہ محمود قریشی شریف آدمی ہیں مگر انہوں نے بتایا کہ حکومت اور پیپلز پارٹی پہلے ہی الیکشن کمیشن پر مک مکا کر چکے ہیں۔ تحریک انصاف کے جلسے خطاب میں انہوں نے کہا کہ عمران کان نے لچک کا مظاہرہ کیا ہے ، یہ بہت بڑی پیش کش ہے ، میاں صاحب! مذاکرات کریں اس سے بڑی پیش کش نہیں ہو سکتی، میں بابا گرو نانک کی دھرتی سے کہہ رہا ہوں کہ اگر میاں صاحب آپ نے غور نہ کیا تو یہ قوم آپ سے انتقام بھی لے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ کہا جا رہا ہے کہ عمران خان غیر آئینی بات کر رہا تو حکومت مجھے اس سوال کا جواب دے کہ مذاکارت میں فوج کے نمائندے کس نے بٹھائے تھے اور وہ کس کی اجازت کے ساتھ شریک ہو رہے تھے؟ انہوں نے دوران خطاب مولانا فضل الرحمان پر بھی سیاست کے لئے دین کا استعمال کرنے کا الزام عائد کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ نے تھر پارکر میں مرنے والوں بچوں کی موت کا سبب بھوک کو قرار دیا ہے مگر ان کو شرم نہیں آتی کیوں کہ یہ تو ان کی بھوک تھی جس نے یہ صورتحال پیدا کی ہے۔شیخ رشید حمد نے خطاب کے آکر میں شرکاء کو حکومت کے خلاف بغاوت پر اکساتے ہوئے ’مر جاؤ یا مار ڈالو اور جلاؤ گھیراؤ‘ کرنے کا پیغام بھی دیا۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -