30سے زائدبرطانوی پارلیمنٹرین کابھارتی وزیراعظم کے دورہ لندن کے موقع پر”کشمیرایشو“اٹھانے کامطالبہ

30سے زائدبرطانوی پارلیمنٹرین کابھارتی وزیراعظم کے دورہ لندن کے موقع ...
 30سے زائدبرطانوی پارلیمنٹرین کابھارتی وزیراعظم کے دورہ لندن کے موقع پر”کشمیرایشو“اٹھانے کامطالبہ

  

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)انتہا پسندی کی وجہ سے دنیا بھر میں رسوا ہونے والے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف ایک طرف تو برطانیہ میں مسلمانوں،عیسائیوں اور سکھوں نے انکے دورے کے دوران احتجاجی مظاہروں کا اعلان کیا ہے اور برطانوی پارلیمنٹ پر روشنیوں سے جگمگاتا بورڈ بھی آویزاں کردیا گیا ہے جس پر لکھا ہے ” مودی آپ کو خوش آمدید نہیں کہیں گے تو دوسری طرف برطانوی پارلیمنٹیرین نے برطانوی وزیراعظم پرزوردیاکہ بھارتی ہم منصب نریندرمودی کے دورہ لندن پرکشمیرکاایشواٹھایاجائے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق برطانوی پارلیمنٹ کے 30سے زائداراکین نے ہاو¿س آف کامن میں قراردادپیش کی ہے جس میں برطانوی وزیراعظم سے مطالبہ کیاگیاکہ وہ اپنے بھارتی ہم منصب نریندرمودی کے ساتھ کشمیرکے مسئلے پرسنجیدگی کے ساتھ بات کریں۔قراردادمیں کہاگیاکہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی پامالی ہورہی ہے ،برطانوی وزیراعظم کشمیرمیں انسانی حقوق کانوٹس لیکربھارتی ہم منصب کے ساتھ اس معاملے کواٹھائے ،واضح رہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندرمودی برطانیہ کے دورے پرلندن پہنچ گئے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -