اوکاڑہ کے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افسر سمیت 3 ملزموں کی درخواست بریت مسترد

اوکاڑہ کے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افسر سمیت 3 ملزموں کی درخواست بریت مسترد

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ نے کروڑوں روپے کی مالی بے ضابطگیوں میں گرفتاراوکاڑہ کے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افسر سمیت تین ملزمان کی بریت کی درخواستیں مسترد کر دیں، عدالت نے ٹرائل کورٹ کو چھ ماہ میں کیس کا فیصلہ سنانے کی ہدایت کی ہے۔مسٹرجسٹس عبدالسمیع خان نے کیس کی سماعت کی۔ملزمان کے وکلاء نے موقف اختیار کیا کہ ان کے خلاف مالی بے ضابطگی کا بے بنیاد اور جھوٹا مقدمہ درج کیا گیا ،ان کے خلاف کوئی شہادت نہیں ہے اس لئے انہیں بری کرنے کی درخواست منظور کی جائے ۔ ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل پنجاب عبدالصمد نے عدالت کو بتایا کہ اینٹی کرپشن نے ڈسٹرکٹ اکاونٹ آفیسر اوکاڑہ عبدالغفار،اکاونٹس آفیسر ملک کرامت حسین اور میاں ندیم آڈیٹر کو 11کروڑ سے زائد سرکاری رقم خورد برد کرنے کے الزامات کے تحت گرفتار کیا۔انہوں نے کہا کہ ملزمان سے 78لاکھ روپے کی رقم برآمد کی جا چکی ہے ،ملزمان کے خلاف 58گواہان موجود ہیں جبکہ مقدمے کا حتمی چالان ٹرائل کورٹ کو بھجوایا جا چکا ہے۔انہوں نے عدالت کو بتایا کہ ملزمان جعلی بلوں کو کسی اعتراض کے بغیر منظور کر کے سرکاری خزانے کو نقصان پہنچانے کا باعث بنے جس پر عدالت نے ملزموں کی بریت کی درخواست مسترد کر دی۔عدالت نے ٹرائل کورٹ کو کیس کافیصلہ چھ ماہ میں کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔

درخواست بریت

مزید :

صفحہ آخر -