اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ پنجاب بھر کے گریڈ 20کے اعلیٰ افسران کیخلاف کارروائی کیلئے بے بس

اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ پنجاب بھر کے گریڈ 20کے اعلیٰ افسران کیخلاف کارروائی ...

  

لاہور( ارشد محمود گھمن) اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ ہیڈ کوارٹر صوبائی اداروں میں میگا کرپشن کے خلاف صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب بھر کے کرپٹ گریڈ 20 کے اعلیٰ افسران کے خلاف کارروائی کے لئے بے بس دکھائی دینے لگا۔ ایسے افراد کے خلاف کارروائی کے لئے چیف سیکرٹری یا وزیر اعلیٰ پنجاب سے اجازت لینا ضروری ، درجنوں درخواستوں پر کارروائی کے لئے اجازت طلب کی گئی جن کو ردی کی ٹوکری کی زینت کردیا گیا جبکہ گریڈ 19 کے افسران کی گرفتاری کے لئے بھی ایڈیشنل چیف سیکرٹری پنجاب سے اجازت لینا پڑتی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ ہیڈ کوارٹر نے صوبائی اداروں کی میگا کرپشن کے خلاف کارروائی کے لئے گریڈ 20 کے اعلیٰ افسران جو مختلف سرکاری ہیلتھ، پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ ، ایل ڈی اے، زراعت، لوکل گورنمنٹ ، سی اینڈ ڈبلیو کے محکموں کے خلاف گریڈ 20 کے اعلیٰ افسران کے خلاف درجنوں درخواستیں موصول ہوئیں جن کے خلاف کارروائی کے لئے محکمہ نے کارروائی کی اجازت طلب کرنے کے لئے چیف سیکرٹری اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے سفارشات طلب کیں مگر اعلیٰ عہدوں پر بیٹھنے اور کرپٹ مافیا کو تحفظ فراہم کرنے والے عناصر نے ان کے خلاف کارروائی کی اجازت دینے کی بجائے درخواستوں کو ردی کی ٹوکری کی زینت کر دیا جس کی وجہ سے محکمہ اینٹی کرپشن بڑے بڑے مگرمچھ اعلیٰ افسران کے خلاف کارروائی کرنے سے قاصر ہے۔ اینٹی کرپشن ذرائع کے مطابق بڑے بڑے کرپٹ افسران کے خلاف کارروائی نہ کرنے کی وجہ سے اختیارات میں کمی کی وجہ سے ادارہ پرناقص کارکردگی کا الزام پایا جاتا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -