پبلک ٹرانسپورٹ کی کمی برقرار، شہری سڑکون پر خوار

پبلک ٹرانسپورٹ کی کمی برقرار، شہری سڑکون پر خوار

  

لاہور (اسد اقبال (صو بائی دارالحکو مت میں ایک طرف تو جہاں شہریوں کو ٹریفک مسائل کا سامنا ہے وہیں پبلک ٹرانسپورٹ کے فقدان نے مسافروں کی مشکلات میں اضافہ کر رکھا ہے ۔ایک کروڑ سے تجاوز کر جانے والی آبادی کے لیے لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی صر ف 500سے کم لوکل گاڑیاں شہر کے روٹس پر چلانے میں کامیاب ہو سکی ہے جس میں سے اکثر ورکشاپوں کی زینت بنی رہتی ہیں۔دوسری جانب ایل ٹی سی کے سی ای او نے دعویٰ کیا ہے کہ ایل ٹی سی پرائیویٹ اور غیر ملکی آپر یٹرز کا حکو مت پر اعتماد بنانے میں کامیاب ہو چکی ہے جس کے نتیجہ میں آئندہ سال کے شروع میں ہی 800کے قر یب اے سی بسیں لاہور کے مختلف روٹس پر رواں دواں ہو نگی جس کے لیے تمام تر اقدامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے ۔پبلک ٹرانسپورٹ پر سفر کر نے والے طلباء و طالبات ، نوکری پیشہ اہلکار سمیت عام شہریوں نے ضلعی حکومت اور ایل ٹی سی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ کے فقدان کو دور کر تے ہوئے بس سٹاپوں کی حالت زار بہتر بنائی جائے ۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں گزشتہ پانچ سال سے ایل ٹی سی کی بنیاد حکو مت نے رکھی جس کو بنانے کا مقصد شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ میں بہتری اور مسافروں کو سہولیات دینا تھا تاہم کروڑوں روپے خر چ ہو نے کے باوجو د ایل ٹی سی اپنے اہداف پورے کر نے میں ناکام رہی ہے اور اس وقت شہر میں چند سو بسیں لاکھوں مسافروں کے لیے مختلف روٹس پر چل رہی ہیں ۔واضح رہے کہ ضلعی حکو مت کی جانب سے مزدا ویگنیں بند کر نے کے بعد لاہور کے باسیوں کو لو کل سفر کے لیے مشکلات کا سامنا ہے ۔اور اس وقت شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ میں کمی کے پیش نظر بس سٹاپوں پر مسافروں کارش لگا رہتا ہے ۔شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب میاں شہبازشریف لاہور میں پبلک ٹرانسپورٹ کے فقدان کو دور کر نے کے لیے احکامات اور اقدامات اٹھائیں ۔"روزنامہ پاکستان" سے خصوصی بات چیت کر تے ہوئے لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر خواجہ حیدر لطیف نے کہا کہ کہ اس بات میں کوئی دو رائے نہیں کہ لاہور میں آبادی کے تنا سب سے پبلک ٹرانسپورٹ کی کمی ہے تاہم پندرہ روٹس کے لیے 312نئی بسیں لائی جارہی ہیں جبکہ آپریٹرز کا اعتماد حکو مت پر بحال کرنے میں ایل ٹی سی نے کلیدی کر دار ادا کیا ہے جس کے پیش نظر پرائیویٹ آپریٹرز نے ایل ٹی سی کے ساتھ کئی ایک معائدے کیے ہیں اوراس کے نتیجہ میں ایل ٹی سی آئندہ سال کے پہلے ماہ میں ہی لاہور میں مزید 800اے سی بسیں چلائے گی جس کے لیے اقدامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے ۔ انھوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ایل ٹی سی کے قیام کے بعد لاہور میں پہلی بار اے سی بسیں شہریوں کے لیے چلائی گئیں جبکہ ٹکٹنگ کا نظام آٹو میٹک کیا گیا اور مسافروں کو سستی اور معیاری سفری سہو لیات فراہم کی گئیں ۔انھوں نے کہا کہ ایل ٹی سی لاہور کے باسیوں کو مزید آسان اور سستی سفری سہولیات کے لیے کئی ایک اقدامات پر کام کر رہی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -